رفسنجانی کے جنازے میں سبز انقلاب جیسا منظر - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: بدھ, 11 جنوری, 2017
0

رفسنجانی کے جنازے میں سبز انقلاب جیسا منظر

ان کے نائب کے لئے 8 امیدوار – اور خامنہ ای ان کے لئے دعا کرنا بھول گئے
1484074201814482000

کل تہران کے وسط میں شاہراہ انقلاب میں تشخیص مصلحت نظام کونسل کے چیئرمین علی اکبر ہاشمی رفسنجانی کا جنازہ (ا۔ف۔ب)

 

لندن: عادل السالمی

      کل تہران میں لاکھوں ایرانیوں نے 37 سالوں کے دوران ایرانی حکومت کی دوسری بڑی قیادت علی اکبر ہاشمی رفسنجانی کے جنازے میں شرکت کی۔ اس دوران وہاں دوبارہ "سبز انقلاب” جیسے مناظر دیکھنے میں آئے، جیسا کہ جون 2009 میں صدارتی انتخابات کے نتائج پر مظاہرات کے دوران ہوا تھا اور اس کے نتیجے میں سابق صدر محمود احمدی نجاد دوسری بار صدر بننے تھے۔

     جنازے میں بڑے بڑے حکومتی عہدیداروں نے شرکت کی، اس دوران دارالحکومت کی اہم شاہراہوں پر رفسنجانی اور ان کے ساتھ مرشد اعلی خامنہ ای کی تصاویر ایک بار پھر دیکھنے میں آئیں، جبکہ اصلاح پسندوں کے حامیوں نے سابق صدر محمد خاتمی کو جنازے میں شرکت سے منع کرنے کی مذمت میں نعرے بازی کی۔

     تہران یونیورسٹی میں نماز جنازہ خامنہ ای کی امامت میں ادا کی گئی، جبکہ اسی دوران اصلاح پسند تحریک کے حامیوں اور خصوصی فورسز؛ جو کہ پولیس اور سیکورٹی کے ماتحت ہے، ان کے مابین جھڑپیں بھی دیکھنے میں آئیں۔

      نماز جنازہ کے دوران خامنہ ای دعا "اللھم إنا لا نعلم منه إلا خيرا وأنت أعلم به منا” بھول گئے جو شیعہ آئمہ نماز جنازہ میں عمومی طور پر پڑھتے ہیں اورجبکہ یہ "غیر واجب” ہے۔ لیکن رفسنجانی کے قریبی نیٹ ورک اور سائیٹس نے اسے دلچسپ خبر کے طور پر پیش کیا۔

       ایرانی بیانات کے مطابق خامنہ ای نے اس دعا کے بدلے دعائیہ جملہ "اللھم عفوک” کی تین بار تکرار کی۔

      دریں اثناء ایرانی میڈیا میں آٹھ امیدواروں کے ناموں پر غور کیا جا رہا ہے جس میں سے خامنہ ای کم از کم کسی ایک کو رفسنجانی کی جگہ تشخیص مصلحت نظام کونسل کے چیئرمین کے عہدہ پر تعینات کریں گے۔

      غیر موثقہ ذرائع کے مطابق ان امیدواروں میں نمایاں طور پر حالیہ صدر حسن روحانی، خامنہ ای کے مشیر خاص علی اکبر ناطق نوری، خامنہ ای کے مشیر خاص علی اکبر ولایتی، اور چیف جسٹس صادق لاریجانی کے نام شامل ہیں۔

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>