کمال جنبلاط کا اسد سے تاریخی گفتگو: ہم تمہارے سنہرے پنجڑے میں داخل نہیں ہونگے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 16 مارچ, 2017
0

کمال جنبلاط کا اسد سے تاریخی گفتگو: ہم تمہارے سنہرے پنجڑے میں داخل نہیں ہونگے

3

اسد کی ملاقات جنبلاط کے ساتھ اور دائیں طرف توفیق سلطان کو بھی دیکھا جا سکتا ہے

بیروت: نذیر رضا

        لبنان کے سابق لیڈر کمال جنبلاط کے قتل پر چالیس سال گزر جانے کے باوجود قومی تحریک کے سابق لیڈر توفیق سلطان کو اپنے دوست سابق شامی صدر حافظ اسد کے ساتھ تصویروں میں دیکھا جا سکتا ہے۔

        اس ملاقات میں جنبلاط نے اسد کے چیلنج پر جرات کر کے لبنان، شام، اردن جیسے ملکوں کو ایک بنانے کے کنفیڈریشن لائحۂ عمل کی تردید کی تھی جسے ترقی یافتہ سوشلسٹ پارٹی کے لیڈر نے فلسطینی انقلاب کو ختم کر دینے والا لائحہ قرار دیا تھا۔

        سلطان نے اپنی ملاقات کی ساری تفصیل "الشرق الاوسط” کو اس طرح بتائی کہ جنبلاط نے اسد کو جواب اس طرح دیا کہ تمہارے پاس آزادی نہیں ہے اور میں ایسے ملک میں نہیں رہ سکتا جہاں آزادی نہ ہو۔ میں تمہارے بڑے سنہرے پنجڑے میں نہیں رہ سکتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جنبلاط نے اسد کو اسی نششت میں لبنان کے داخل ہونے سے ڈرایا تاکہ اس کے ذریعہ اسرائیل کے لئے آسان نہ ہو جائے کہ وہ ہمیں تاریک غار میں ڈھکیل دے۔

        ملاقات کے دوسرے سال یعنی 16 مارچ 1977 ایک گولی نے جنبلاط کو خاموش کر دیا اور اس کا الزام اسد کی انتظامیہ پر لگا دیا گیا۔

جمعرات 17 جمادی الثانی 1438ہجری – 16مارچ 2017ء شمارہ نمبر {13988}

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>