سعودی – چینی سربراہی اجلاس ۔۔۔ اور 65 ارب ڈالر کے منصوبہ جات - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق الاوسط
کو: جمعہ, 17 مارچ, 2017
0

سعودی – چینی سربراہی اجلاس ۔۔۔ اور 65 ارب ڈالر کے منصوبہ جات

خادم حرمین کا بین الاقوامی امن و سلامتی کے فروغ پر زور – اور جین بینگ کا تعلقات میں فروغ کا خیر مقدم
1489690867441926600

کل بیجنگ میں شاہ سلمان اور چین کے صدر جین بینگ نمائش زیر عنوان "جزیرۂ عرب میں تجارت کی راہوں” کی اختتامی تقریب میں (تصویر: بندر الجلعود)

 

 

بیجنگ: "الشرق الاوسط” – رياض: فتح الرحمن يوسف ، شجاع البقمی

      خادم حرمين شريفين شاہ سلمان بن عبد العزيز نے اپنے چین کے دورے کے دوران چین کے صدر چی جین بینگ کے ساتھ سرکاری اجلاس منعقد کیا۔

      خادم حرمین شریفین نے بیجنگ میں واقع ایک بڑے عوامی ہال میں بات چیت کے سیشن کے دوران عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ ملکوں میں امن وسلامتی کے فروغ کی خاطر مزید مشترکہ کوششیں اور کام کرے۔

      شاہ سلمان نے زور دیتے ہوئے کہا کہ حالیہ وقت میں  پوری دنیا امن واستقرار کے حوالے سے خطرات سے دوچار ہے اور ان میں سرفہرست دہشت گردی کا رجحان، ملکوں کے اندرونی معاملات میں مداخلت، ہتھیاروں کی دوڑ اور ثقافتوں کا تصادم شامل ہے۔

      خادم حرمین شریفین نے گذشتہ سال کی ابتداء میں چینی صدر کے سعودی عرب کے دورہ کی جانب اشارہ کرتے ہوئے یقین دہانی کی کہ سعودیہ چین اعلی سطحی کمیٹی کا قیام اسی دورے کے ثمرات ہیں۔ انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ اس کی بدولت اسٹریٹیجک شراکت داری کی سطح پر دونوں ممالک کے مابین تعلقات کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔

      دوسری جانب چین کے صدر جین بینگ نے خادم حرمین شریفین کو ان کے ملک کا دورہ کرنے پر خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ شاہ سلمان کا دورہ "خادم حرمین شریفین کی جانب سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کی ترقی کی عکاسی کرتا ہے”۔

      صدر جین بینگ نے یقین دہانی کی کہ چین کی قیادت مملکت سعودیہ اور چین کے مابین اعلی سطحی تعلقات کے فروغ کی خواہاں ہے۔

      فریقین نے 21 معاہدوں، مفاہمتی یادداشت اور ایک پروگرام پر دستخط کیے جس کی کل مالیت 65 ارب ڈالر ہے۔

دستخط کئے گئے ان معاہدوں کی فہرست میں صنعتی سرمایہ کاری کے عام مواقع، بنیادی ڈھانچے کی مفاہمتی یادداشت، مختلف منصوبہ جات میں سرمایہ کاری کے لئے اسٹریٹجک تعاون، دونوں ممالک میں ریڈیو اور ٹیلی ویژن کے اداروں کے مابین تعاون کے ایگزیکٹو پروگرام، تعلیمی شعبہ میں تعاون کی یادداشت اور جوہری ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال کیلئے جوہری سلامتی کے تنظیمی معاملات میں تعاون پر مفاہمت کی یادداشت سمیت دیگر شعبوں سے متعلق یادداشتیں شامل ہیں۔

جمعہ 18 جمادى الثانی 1438 ہجری­ 17 مارچ 2017ء شمارہ (13989)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>