"سلک روڈ" کے احیاء کے لئے 4 ملیار ڈالر - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 15 مئی, 2017
0

"سلک روڈ” کے احیاء کے لئے 4 ملیار ڈالر

1494773204469448800

کل بیجنگ میں چی، پیوٹن اور اردگان دیگر ممالک کے نمائندوں کے ساتھ "بیلٹ روڈ فورم” میں شرکت کے دوران  (ا.ب.ا)

بیجنگ: فادیہ فوزی – لندن: "الشرق الاوسط”

      کل بیجنگ میں 130 سے زائد ممالک اور درجنوں بین الاقوامی تنظیموں کی نمائندگی کرتی ہوئی 1500 شخصیات کی شرکت کے ساتھ بین الاقوامی تعاون کے ضمن میں "بیلٹ روڈ” سربراہی اجلاس کی کاروائی کا آغاز کیا گیا۔ اس سربراہی اجلاس کا مقصد قدیم "سلک روڈ” کو بحال کرنا ہے، جس پر اونٹوں کے ذریعے وسطی سلطنت کی مصنوعات کو وسطی ایشا کے راستے یورپ اور اس کے برعکس منتقل کیا جاتا تھا۔ اجلاس کے دوران تینوں براعظموں؛ ایشیا، یورپ اور افریقہ، میں ریلوے، ہائی ویز، بندرگاہوں اور توانائی کے شعبہ جات میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری کے منصوبوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

      چین کے صدر شی جین بینگ نے اپنی افتتاحی تقریر کے دوران نئے سلک روڈ کے منصوبے کے لئے 124 ملیار ڈالر کی رقم مختص کرنے کا وعدہ کیا تاکہ یہ آپس میں امن و سلامتی اور آزادانہ تجارت کی راہ بنے۔ اس سربراہی اجلاس میں روسی صدر ولادیمیر پوٹن اور ترکی کے صدر رجب طیب اردگان سمیت 29 سربراہان ریاست و حکومت نے شرکت کی۔

پیر 18 شعبان 1438 ہجری ­ 15 مئی 2017ء  شمارہ: (14048)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>