ٹرمپ اور کلنٹن کے مابین ہونے والے آخری مناظرے سے پہلے مائیکل مور کی ٹرامپ کے خلاف فلم ریلیز - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 7 نومبر, 2016
0

ٹرمپ اور کلنٹن کے مابین ہونے والے آخری مناظرے سے پہلے مائیکل مور کی ٹرامپ کے خلاف فلم ریلیز

امریکہ میں صدارتی انتخابات ہونے سے تین ہفتہ پہلے کلنٹن کو فلمی اسٹارز کی حمایت حاصل

9-1

نیویورک:الشرق الاوسط

امریکی صدارتی انتخابات کے امیدواروں میں سے کسی ایک کی حمایت کرنے کے لئے ہالی ووڈ کی مشہور فلمی شخصیات نے سیاسی میدان میں اپنی سرگرمیوں کو تیز کردیا ہے۔  ایسا لگتا ہے کہ ان کی حمایت کا بڑا حصہ ڈیموکریٹک پارٹی کی امیدوار ہلیری کلنٹن کے نصیب میں آئے گا۔ بائیں بازو کی سیاسی جماعت سے تعلق رکھنے والے فلم ساز مائيکل مور، جو اپنی دستاویزی فلموں کے لئے کافی مشہور ہیں، نے ری پبلکن امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ کے خلاف ایک فلم ریلیز کی ہے۔ دوسری طرف 2016ء کے امریکی صدارتی انتخابات کے آخری ہفتوں میں وائٹ ہاؤس کی دوڑ میں شامل ٹرمپ کی حریف کلنٹن کی حمایت کرنے کے لئے ہالی ووڈ نے اپنی کوششوں کو تیز کردیا ہے۔ آسکر انعام یافتہ مور، جنھوں نے امریکہ میں صحت عامہ کے نظام، عراقی جنگ، اور ہتھیار جیسے موضوعات پر دستاویزی فلمیں ریلیز کرچکے ہیں، نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر لکھا کہ وہ اپنی فلم "مايكل مور إن ترامبلاند” پیر کے دن ریلیز کررہے ہیں جو اس دن مفت میں لوگوں کو مین ہاٹن میں دکھائی جائيگی۔ پھر بدھ کے روز سے اسے لاس انجلس اور نیویارک کے سینما گھروں میں اس کے تجارتی شو شروع کئے جائیں گے۔ یہ فلم امریکی صدارتی انتخابات سے تین ہفتہ پہلے ریلیز کی جارہی ہے۔ صدارتی انتخابات اگلے مہینے نومبر کی آٹھ تاریخ کو ہونگے۔ فلم کا اجمالی خاکہ اس بات کی رہنمائی کرتا ہے کہ اس کا مقصد آنے والے اکتوبر کے ہنگامی صورتحال کو پیش کرنا ہے جسے مور نے حال ہی میں اوہائیو میں انفرادی طور پر پیش کیا تھا جو مور کے دشمن کی سرزمین پر غوطہ زنی کی عکاسی پیش کرتا ہے۔ ریپبلکن امیدوار ٹرمپ کے حوالے سے مور کی مخالفت بالکل واضح ہے۔ اس فلم سے یہ واضح ہوتا ہے کہ انتخابات سے پہلے کلنٹن کے ارد گرد فلم انڈسٹری کی درجنوں بڑی شخصیات جمع ہوچکی ہیں۔

پیر کے روز براڈوی میں کلنٹن کی انتخابی مہم کے لئے فنڈز جمع کرنے کے لئے تیس فلمی ستاروں نے جن میں سرفہرست  باربرا سترايسند، وبيلي كريستال، جوليا روبرتس، ہيلين ميرن، اور ولينا دنہام وغیرہ نے ایک نمائش لگائی جس میں ٹکٹ کے دام دس ہزار ڈالر تک پہنچ گئے تھے، نیز نمائش میں پیش کردہ پارٹی کو لایو دکھایا گیا۔ دوسری طرف کلنٹن کی انتخابی مہم کے حوالے سے مشہور گلوکارہ جینیفر لوپیز اور جون بون جوفي فلوریڈا میں الگ الگ پارٹیوں میں اپنے پروگرام پیش کریں گے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>