کویت: عدالت نے اپنا آخری فیصلہ سناتے ہوئے الصباح خاندان کو الیکشن لڑنے سے منع کریا۔ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 14 نومبر, 2016
0

کویت: عدالت نے اپنا آخری فیصلہ سناتے ہوئے الصباح خاندان کو الیکشن لڑنے سے منع کریا۔

نوجوان انتخابی طاقت ہیں سیاسی بلاک ان کا شیرازہ نہیں بکھیر سکتے

111111

                                                                        الیکشن مہم میں شرکت کرتی ہوئی کویتی خواتین

     پارلیمانی الیکشن میں الصباح خاندان کی شرکت کے بارے میں ہائی کورٹ نے آخری فیصلہ سنایا اور کل یہ مقرر کیا کہ شیخ مالک الصباح کا نام امیدواروں کی لسٹ سے خارج کر دیا جائے۔ اس اقدام کو ایسے دیکھا جا رہا ہے کہ یہ فیصلہ الصباح خاندان کے پارلیمانی الیکشن میں داخل ہونے پر پابندی لگانے کی حیثیت رکھتا ہے۔ اس فیصلے کی روشنی میں مالک الصباح ماہ رواں نومبر کی 26 کو آنے والے پارلیمانی الیکشن میں شرکت نہیں کرسکیں گے۔

     کویت میں قومی اسمبلی کے الیکشن میں شرکت کرنے والے امیدواروں کے ڈیٹا سے بکثرت نوجوانوں کے موجودگی کا پتہ چلتا ہے، ان میں سے زیادہ تر نوجوان پارلیمانی معرکہ میں پہلی بار داخل ہو رہے ہیں۔

     حالیہ کونسل میں 376 امیدوار ہیں، ان میں 87 امیدوار نوجوانوں کی دونوں اصناف کی نمائندگی کر رہے ہیں اور ان کی عمریں 30 سے 39 سال کے درمیان ہیں۔ یہ امیدواروں کی تعداد کا تقریبا پانچواں حصّہ ہے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>