مکہ مکرمہ پر یورش کی فائل اقوام متحدہ کی طرف - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 18 نومبر, 2016
0

مکہ مکرمہ پر یورش کی فائل اقوام متحدہ کی طرف

ایران کی  غیر حاضری  اور عراق کا  تحفظ، صالح ،حوثی اور ان کے معاونین پچاس اسلامی ملکوں کی نگاہوں میں مجرم –
iran

کل مکہ مکرمہ میں منعقدہ "اسلامی تعاون تنظیم” کے ہنگامی اجلاس میں ایران کی کرسی خالی نظر آتی ہوئی

مکہ مکرمہ: سعیدالابیض

      اسلامی تعاون تنظیم کے وزرائے خارجہ کی طرف سے منعقدہ ہنگامی اجلاس میں صالح اور حوثی کے میلیشیاؤں کی طرف سے مکہ مکرمہ پر بیلسٹک میزائل کے ذریعہ کئے گئے یورش کی فائل کو اقوام متحدہ بھیجنے کا فیصلہ لیا گیا-  اسی طرح مکہ مکرمہ میں منعقدہ اجلاس کے دوران اکیاون  (51)  ملکوں کے نمائندوں کی حاضری اور ایرانی نمائندہ کی غیر حاضری میں مکہ مکرمہ اور دوسرے مقدس جگہوں پر دوبارہ اس طرح کی حرکت  نہ ہونے کی سلسلہ میں ضروری بین الاقوامی کاروائیاں اختیار کرنے کے لئے  تنظیم کے رکن ممالک کے نام سے ایکزیکٹیو کمیٹی کی طرف سے ایک پیغام اقوام متحدہ بھیجنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔

      اسی طرح اس اجلاس میں مذکورہ حرکت کے بار بار نہ ہونے کے لئے جلد عملی اقدام کرنے کے سلسلہ میں غور وفکر کرنے کے لئے ایکزیکٹیو کمیٹی کے رکن ممالک میں سے ایک ورکنگ گروپ تشکیل دینے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔

      عراق نے صادر ہونے والے فیصلہ کے سلسلہ میں تحفظ اختیار کرتے ہوئے اسلامی اتفاق سے نکل کر ان فیصلوں سے مخالفت کیا ہے جبکہ مکہ مکرمہ  کا یہ اجلاس صادر ہونے والے اتفاق کے اعتبار سے بہت ہی ممتاز اجلاس شمار کیا گیا ہے- اور اس اجلاس کے آغاز سے انتہاء تک مشارکین کے درمیان کوئی اختلاف یا اعتراض دیکھنے کو نہیں ملا  ہے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>