یمن کے لئے ہمارا منصوبہ قابل تعدیل ہے:واشنگٹن - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: بدھ, 23 نومبر, 2016
0

یمن کے لئے ہمارا منصوبہ قابل تعدیل ہے:واشنگٹن

عدن میں اقوام متحدہ کے دفتر کھولنے پر یمن کا اطمینان۔۔۔۔ اور تمام سفارت خانوں کو اس میں شامل ہونے کی دعوت

لندن: بدر القحطانی – عدن: عرفات مدابش

 

       امریکی ڈپلومیٹک ذرائع نے یقین دہانی کی ہے کہ امریکی وزیر خارجہ جان کیری کی طرف سے پیش کردہ یمنی بحران کو حل کرنے کا لائحہ عمل قابل تعدیل ہے۔ یمن میں امریکی سفیر "ماتھیو ٹولر” نے "الشرق الاوسط” سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وزیر کیری کا لائحہ عمل "پتھر پر لکیر نہیں” اور اس میں شامل اقدامات کی ترتیب کے سوا یہ قابل تعدیل ہے۔ ٹولر نے کہا کہ یہ منصوبہ "امن سمجھوتہ نہیں” بلکہ یہ فریقین کے مابین مذاکرات شروع کرنے کے لئے ایک فریم ورک ہے جس سے انھیں واپس گفتگو کی میز پر لانا ہے۔ ٹولر نے مزید کہا کہ "کم سے کم سیکورٹی اقدامات کے ذریعے صنعا میں حکومت کی واپسی اور انقلابی کمیٹیوں (حوثیوں) وغیرہ کے خوف یا ڈر کے بغیر اپنے کام کو جاری رکھنے کے عمل کو یقینی بنایا جائے گا”۔ بحران کے حل کے لئے یمنی حکومت کی طرف سے تین بنیادی اصولوں کو تھامنے پر تبصرہ کرتے ہوئے امریکی سفیر نے کہا کہ یہ بنیادی اصول روڈ میپ کے لئے ضمانت فراہم کرتے ہیں جسے ملک میں جاری مسائل حل کرنے کے لئےآئندہ مراحل میں استعمال کیا جائے گا۔  

        انہوں نے مزید کہا کہ یمن کے لئے اقوام متحدہ کے سفیر "اسماعیل ولد شیخ احمد” سے گفتگو "تعمیری اور عملی طریقوں” کے تین بنیادی اسلوبوں پر منحصر رہی۔

        اسی ضمن میں، یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی نے فائر بندی کے ختم ہونے کے بعد تمام محاذوں پر فوجی کاروائیاں دوبارہ شروع کرنے کے ساتھ ساتھ فوجی قیادت  میں بڑے پیمانے پر تبدیلیاں کیں۔ انہی تبدیلوں میں میجر جنرل عبد الرب الطاہری جنکا تقرر ماسکو میں موجود یمنی سفارت خانے میں بطور فوجی اتاشی کیا گیا تھا ان کی بجائے میجر جنرل احمد سیف الیافعی کو نائب چیف آف آرمی سٹاف مقرر کرنا ہے۔

       اسی  سیاق میں، یمنی وزیراعظم احمد عبید بن دغر نے عارضی دارالحکومت عدن  میں اقوام متحدہ کے انسانی امور کے لئے خاص دفتر کے کھولنے پر حکومت کے طرف سے اطمینان کا اظہار کیا۔ دغر نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے انسانی امور کے لیے معاون”رشید خال کوف” سے ملاقات کے دوران کہا کہ "اقوام متحدہ کی جانب سے عدن میں دفتر کھولنا ایک مثبت عمل ہے جس سے عدن میں  دیگر بین الاقوامی امدادی تنظیموں کواپنے  دفاتر کھولنے میں مدد ملے گی”۔ بن دغر نے اشارہ کیا کہ "حکومت تمام سفارت خانوں، سفارتی مشنوں اور بین الاقوامی تنظیموں کو عارضی دارالحکومت عدن میں کام کرنے کے لئے مدعو کرے گا ۔ 

متعلقہ عنوانات‬:, ,
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>