لندن میں دہشت گردی کی روک تھام کے لئے 10 ہزار پولیس اہلکار اور مخبر افراد - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 6 دسمبر, 2016
0

لندن میں دہشت گردی کی روک تھام کے لئے 10 ہزار پولیس اہلکار اور مخبر افراد

حکومت مسلمانوں کی تنہائی کے مسائل حل کرنے میں ناکام: رپورٹ
a45uw45uw5u6w56uw56u

لامبث پولیس آفیسر رچرڈ ووڈ میٹرو اسٹیشن کے سامنے ایک شہری سے بات کرتے ہوئے (الشرق الاوسط)

 

لندن: "الشرق الاوسط”

        لندن پولیس (اسکاٹ لینڈ یارڈ) نے 10 ہزار سے زائد پولیس سیکورٹی اہلکار اور مخبر افراد کو برطانوی دارالحکومت کی سڑکوں، عوامی مقامات اور میٹرو اسٹیشنوں پر ہر طرح کی دہشت گردی کی سرگرمیوں کو روکنے اور دشمنانہ یا دیگر مجرمانہ سرگرمیوں کی اطلاع کی صورت میں ہر شخص کی تلاشی لینے کے لئے تعینات کیا ہے۔

       اسکاٹ لینڈ یارڈ  کے سرکاری ترجمان نے "الشرق الاوسط” سے ٹیلی فونک رابطے کے دوران کہا کہ "سرویٹور” نامی نئے منصوبے کے تحت متعلقہ علاقے کے رہائشیوں کو اپنے کان اور آنکھیں کھلی رکھنے پر ضرور ان کی حوصلہ افزائی کی جانی چاہئے تاکہ کسی بھی مشکوک شخص کی طرف سے کسی قسم کے خوف یا مشکوک حرکت کی صورت میں سیکورٹی حکام سے رابطہ کیا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ کل حکومت کی جانب سے شائع کردہ رپورٹ میں بعض برطانوی جماعتوں کی طرف سے معاشرے کے دیگر گروہوں سے الگ ہونے پر خبردار کیا ہے، انہوں نے سماجی اور اقتصادی تنہائی جس سے پورے ملک کے مسلمان گزر رہے ہیں اس میں حکومتی ناکامی سے انتہا پسندوں کے فائدہ اٹھا  کی جانب اشارہ کیا۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>