سعودیہ عرب کے ساتھ ہمارا مضبوط تعلق مستقبل کی ضمانت ہے: سامح شکری - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 7 دسمبر, 2016
0

سعودیہ عرب کے ساتھ ہمارا مضبوط تعلق مستقبل کی ضمانت ہے: سامح شکری

%d8%b4%da%a9%d8%b1%db%8c

واشنگٹن: ہبہ مدسی  

       مصرى وزير خارجہ سامح شكرى نے حال ميں مصر اور سعودى عرب كے مابين كشيدگى كو اہميت نہيں دى بلكہ انہوں نے دونوں ملكوں كے درميان  عوامى اور حكومتى سطح پر مضبوط تعلقات ہونے پر زور ديا-

      شكری نے واشنگٹن کے دورے کے موقع سے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت یا عوام کی سطح  پر مصر اور سعودی عرب کے خصوصی تعلقات مشترکہ انجام، مشترکہ تاریخ اور ربط وتعلق  کا ایک خاص فطری سنگم  ہے۔  دونوں ملکوں کے عوام کے مابین تاریخی تعلقات ہیں جس کی وجہ سے  ہمیشہ یہ مقصد ہوتا ہے کہ ان تعلقات کو مضبوط اور سازگار بنایا جائے اور یکساں طور پر دونوں ملکوں کے عوام کے مفادات کے لئے انہیں ایک صحیح رخ دیا جائے۔ ان دونوں ملکوں کے مابین دو طرفہ اور علاقائی صورتحال سے متعلق بہت سے مسائل کو حل کرنے، چیلنجوں کا مقابلہ کرنے اور خاص طور پر عرب قومی سلامتی اور خلیجی سلامتی کی حفاظت کے سلسلہ میں اتحاد وانتظام اورایک کردارموجود ہے۔

      امریکی دارالحکومت کے دورے کے سلسلہ میں شکری نے واضح کیا کہ نومنتخب صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے ساتھ بات چیت کرنے اور مصری صدر عبد الفتاح السیسی کی طرف سے انہیں ایک پیغام پہنچانے کا مقصد یہ ہے کہ مصرنئی انتظامیہ کے ساتھ تعلقات کو مضبوط کرنے کے لئے تیار ہے اور اسی طرح استحکام کی حصولیابی اور  دہشت گردی کے خاتمے کے ذریعہ علاقائی اور مشترکہ مفادات حاصل کرنے میں تعاون اور مدد کرنے کے لئے مستعد ہے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>