سعودیہ کا "ویژن 2030" کی تکمیل کے لئے پہلا تاریخ ساز بجٹ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 22 دسمبر, 2016
0

سعودیہ کا "ویژن 2030” کی تکمیل کے لئے پہلا تاریخ ساز بجٹ

اندازے کے مطابق حقیقی طور پر کم خسارے کی توقعات
1482337283269768900

سعودیہ کا 5٫17 ارب ڈالر مالیت کے بین الاقوامی بانڈ کے اجراء کا اعلان "الشرق الاوسط”

ریاض: شجاع البقمی

      آج سعودی افراد سال 2016 اور سال 2017 کے بجٹ کے اعلان کا انتظار کر رہے ہیں یہ پہلا بجٹ ہے جو کہ”مملکت ویژن 2030″ کے اعلان کے بعد اس کے اہداف کو مدنظر رکھ کربنایا گیا ہے۔ معاشی تجزیہ اس جانب اشارہ کرتے ہیں کہ موجودہ سال میں اصل خسارے کا حجم؛ گزشتہ سال کے آخر میں پیش کئے گئے بجٹ اعلامیہ کے تخمینہ سے کم ہوگا۔

       یہ سب اس وقت ہو رہا ہے کہ جب مملکت معاشی ترقی کے لئے پوری دنیا کے ممالک کی بہ نسبت سب سےزیادہ متحرک ہے۔

     سال 2016 کے بجٹ میں خسارے کے تخمینے کا حجم تقریبا 326 ارب ریال (9٫86 ارب ڈالر) لگایا گیا تھا۔ لیکن وہ  معاشی اصلاحات جن پر سعودیہ نے عمل شروع کیا ان کی بنا پر 2016 کے بجٹ میں اصل خسارے کے حجم میں واضح کمی کی توقع ہے۔ باوجود اس کے کہ رواں سال کے دوران تیل کی اوسط قیمت میں سال 2015 کی بہ نسبت ریکارڈ کمی دیکھنے میں آئی کہ جب قیمت 43 ڈالر فی بیرل کے گرد گھومتی رہی ہے۔

      اسی ضمن میں، سعودیہ عرب کا سال 2017 کے بجٹ کا شمار ایک ہی وقت میں کاروباری شعبہ، کمپنیوں اور سرمایہ کاروں کے لئے ایک نمایاں اور ممتاز اقتصادی پروگرام کے طور پر کیا جاتا ہے۔ جبکہ نئے سال کے دوران سرکاری اخراجات کے تخمینے کے بیان کردہ اعداد وشمار اس کے حجم کو ظاہر کرتے ہیں۔ توقعات کے مطابق مملکت کی طرف سے منصوبوں پر خطیر رقم خرچ کرنے کا بنیادی مقصد ملکی معاشیت میں حرکت اور نمو لانا ہے۔

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>