ترکی کی جانب سے "الباب" میں اتحادیوں سے اپیل - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: منگل, 27 دسمبر, 2016
0

ترکی کی جانب سے "الباب” میں اتحادیوں سے اپیل

شامی حکومت اپوزیشن کے خلاف شدت پسندوں کو بھرتی کرنے کی کوشش کر رہی ہے
1482766919304225000

"ڈھال فرات” نامی فوجی مہم میں اپوزیشن کے جنگجو افراد حال ہی میں "داعش سے آزاد کرائے گئے مشرقی حلب کے مضافاتی علاقے الراعی کے داخلی راستے پر (رویٹرز)

 

انقرہ: سعيد عبد الرازق – بيروت: يوسف دياب

       کل ترکی نے شامی سرحدی شہر "الباب” کو آزاد فوج کی حمایت یافتہ تنظیم "داعش” سے آزاد کرانے میں درپیش مشکلات کے اعتراف میں بین الاقوامی اتحادی طیاروں سے مدد طلب کی ہے جس کی قیادت ریاست ہائے متحدہ امریکہ کر رہا ہے۔

       ترک صدارتی ترجمان "ابراہیم کالین” نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ان کا ملک "ڈھال فرات” آپریشن کے تحت "الباب” شہر کو آزاد کرانے کی کاروائی کے لئے فضائی مدد حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ "الباب میں جو ہم کاروائی کر رہے ہیں اس میں بین الاقوامی اتحاد کو چاہئے کہ وہ فضائی امداد سے متعلق اپنی ذمہ داریاں پوری کرے”۔ انہوں نے کہا "ضروری امداد فراہم نہ کرنا ناقابل قبول عمل ہے”۔

       دوسری جانب، شامی حکومت تشدد پسند افراد کو اپوزیشن کے خلاف بھرتی کرنے کی کوشش کر رہی ہے، جیسا کہ ان کی جیلوں سے رہا ہونے والے ایک نماٰیاں تشدد پسند قیدی حسن صوفان نے بھی اس بات کی تصدیق کی تھی۔

       شامی شدت پسند تحریکوں کے امور کے ماہر اور اپوزیشن کے فرد عبد الجلیل سعید نے "الشرق الاوسط” سے کہا کہ "صوفان کی رہائی مسلح مخالفین کے ساتھ حکومت کے ایک معاہدے کا حصہ تھی جس کے تحت مشرقی حلب سے شہریوں اور جنگجوؤں کو نکالنے کی ابتدا کی گئی۔

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>