تباہ شدہ شام میں جنگ بندی کے لیے ماسکو متحرک - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 31 دسمبر, 2016
0

تباہ شدہ شام میں جنگ بندی کے لیے ماسکو متحرک

1

کل شامی عوام نماز جمعہ کے بعد بشار الاسد کی حکومت کے خلاف ریف حلب کے اتارب نامی علاقہ میں مظاہرہ کرتے ہویے

بیروت: نذیر رضا

        روس شام میں انقرہ کے ساتھ ہونے والے فائر بندی معاہدہ کی بین الاقوامی نگرانی کی بنیاد پر کل متحرک ہوا ہے اور اس نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اپنے شرکاء سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فائر بندی معاہدہ اور آستانہ میں ہونے والے آئندہ امن مذاکرات کی حمایت میں ایک قرارداد پاس کریں۔

        روسی سفیر ویتالی چرکن نے صحافیوں کو بتایا کہ انہوں نے روسی اور ترکی منصوبہ بندی کی بنیاد پر "مختصر قرارداد” کو توثیق کے لیے پیش کر دیا ہے جس میں قتل وقتال بند کرنے کی بات کی گئ ہے، اسی طرح اس میں آئندہ جنوری کے اخیر میں آستانہ مذاکرات کا ذکر ہےاور امید ہے کہ ہم متفقہ طور ہفتہ  کی صبح تک اسے حاصل کر لیں گے۔

        جنگ بندی کا پہلا دن گزر گیا جبکہ جنگ بندی نافذ ہونے کے چند گھنٹے کے بعد حکومتی فورسز اور اتحادی میلیشیاؤں کی طرف سے دمشق اور حماہ کے دیہی علاقوں میں30 خلاف ورزیاں ہوئيں ہیں۔

        وادی اور ریف حما کے علاقوں پر فضائی حملہ نے شام میں ان مرکزی جماعتوں کی خاموشی کو مکدر کر دیا جنہوں نے نماز جمعہ کے بعد حزب اختلاف کو  مظاہروں میں نکلنے کا موقعہ فراہم کیا تاکہ موجودہ حکومت کے خاتمہ کا مطالبہ کرنے کے لئے مارچ 2011 میں شروع ہوئے پرامن احتجاج کو دوبارہ بحال کیا جا سکے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>