پوٹن کی عقلمندی پر ٹرمپ کی تعریف کرنےکی وجہ سے انہیں ریپبلکن اور ڈیموکریٹک کی طرف سے تنقید کا سامنا - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 1 جنوری, 2017
0

پوٹن کی عقلمندی پر ٹرمپ کی تعریف کرنےکی وجہ سے انہیں ریپبلکن اور ڈیموکریٹک کی طرف سے تنقید کا سامنا

4

واشنگٹن: "الشرق الاوسط”

        امریکی نو منتخب صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے پرسوں روسی صدر ولادیمیر پوٹن کی انتہائی عقلمندی کی تعریف کر کے ریپبلکن اور ڈیموکریٹس امریکیوں کے غصہ کو ہوا دے دی، یاد رہے کہ ٹرمپ نے روسی صدر کی تعریف اس وقت کی جب واشنگٹن نے ان پر صدارتی انتخابات میں مداخلت کرنے کا الزام عائد کر کے ماسکو پر پابندیاں لگا دی اور انہوں نے تحمل کا مظاہرہ کیا۔

         فرانس نیوز ایجنسی کے مطابق یہ اطلاع ملی ہے کہ سابق امریکی صدر کے ریپبلیکن امیدوار آئیون ماکمولن نے اپنے "ٹویٹر” پر امریکہ کے سب سے بڑے مد مقابل کی صف میں  ٹرمپ کے کھڑے ہونے پر  ناپسندیدگی کا اظہار کیا ہے یہاں تک کہ یہ مد مقابل ہماری جمہوریت پر بھی حملہ کرتا ہے۔

         اسی طرح دفاعی کمیٹی کے رکن ڈیموکریٹک سینیٹر کلیئر ماکاسکیل نے اپنے تعجب کا اظہار کرتے ہویے کہا کہ انٹیلی جنس کمیونٹی یہ کہنے  پر متفق ہےکہ پوٹن نے ہمارے انتخابات میں خلل ڈالنے کی کوشش کی ہے جبکہ روسی عوام ٹرمپ اور پوٹن کے درمیان محبت کے نغمہ گا رہی ہے۔

        دوسری طرف "واشنگٹن پوسٹ” کی رپورٹ کا کہنا ہے کہ روسی ہیکروں نے مشرقی علاقوں میں بجلی فراہم کرنے والی ایک امریکی کمپنی کے کمپیوٹر کو ہیگ کر لیا ہے اور اخبار نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ امریکی حکام ابھی تک اس کام کے روسی محرکات سے غافل ہیں۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>