جزائر کے لئے"بہار عرب" کا خیال پریشان کن - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 7 جنوری, 2017
0

جزائر کے لئے”بہار عرب” کا خیال پریشان کن

4

جزائر: "الشرق الا وسط”

        جزائر کی حکومت کے لئے نام نہاد "بہار عرب” کا خیال پریشان کن ثابت ہوا۔ حکومت چند جماعتوں پر یہ الزام عا‏ئد کر رہی ہے کہ گزشتہ ہفتہ سڑکوں پر مظاہرے اور احتجاج کے بعد سیاسی نظام کو تبدیل کرنے کی کوشش کر رہی ہیں اور ان کے افراد  نے گزشتہ مظاہروں میں عوامی سہولیات اور ذاتی املاک کو جلایا اور تباہ وبرباد کیا ہے۔

        جزائری حکومت کی طرف سے اماموں کے لئے سخت ہدایات جاری کی گئیں ہیں جن میں ان سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ جمعہ کے خطبوں کے ذریعہ لوگوں کے ذہن ودماغ میں ملک کی امن وسلامتی کو پامال کرنے کی برائیوں سے متعلق شعور وآگاہی پیدا کریں۔ جمعہ کی رات اماموں کو مذہبی امور کی وزارت کے ذریعہ ایک  تحریر موصول ہوئی ہے اور اس کی ایک کاپی "الشرق الاوسط” پاس بھی ہے، جس میں بہت ساری ہدایتیں کی گئیں ہیں، یعنی عوام کو باد دلایا جائے کہ اللہ رب العزت کی طرف سے بندوں کو عطا کردہ نعمتوں میں امن وسلامتی اور استقرار واستحکام کی نعمت سب سے بڑی ہے، امن وسلامتی اور استقرار واستحکام کو باقی رکھنا شریعت خداوندی کا مقصد ہے اور اسے ہر جگہ اور ہر مقام پر تمام شہریوں کے حق میں ایک فرض کی حیثیت حاصل ہے۔

        ہزاروں مسجدوں کی طرف بھیجی گئیں ہدایتیں ملک کے مشرق میں واقع تین ریاستوں میں پیر اور منگل کو ہویے سخت مظاہروں اور احتجاج کے سلسلے میں وزیر اعظم عبد المالك سلال  کے سخت بیانات کے مشابہ تھیں۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>