شام کی آٹھ تنظیموں کی شمولیت اور"اعزاز" میں قتل عام - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 8 جنوری, 2017
0

شام کی آٹھ تنظیموں کی شمولیت اور”اعزاز” میں قتل عام

1

گورنریٹ ادلب کے "معرة نعمان” نامی شہر کے قریب فضائی حملہ کے بعد سول ڈیفنس کے رضاکار ایک عمارت کے ملبے میں زندہ بچ جانے والے لوگوں کو تلاش کرتے ہوئے

بیروت: نذیر رضا

        شامی حزب اختلاف کے ذرائع نے کل اس بات کا اعلان کیا ہے کہ شمالی شام میں حزب اختلاف کی آٹھ بڑی جماعتیں "شام لبریشن  لیڈر شپ کونسل” کے ما تحت جمع  ہو گئیں ہیں۔

        حزب اختلاف کے ذرائع نے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہویے کہا کہ باہم جمع  ہونے والی جماعتوں کے نام مندرجہ ذیل ہیں: "جيش الإسلام”، "اجناد الشام”، "صقور الشام”، "تجمع فاستقم كما أمرت”، "فيلق الرحمن”، "فيلق الشام” اور "جبهۃاهل الشام”۔

        ان اداروں نے جماعتوں کے فوجی رہنماؤں کی ایک فوجی تنظیم اور سیاسی رہنماؤں کی ایک سیاسی تنظیم کے قائم کرنے پر اتفاق کیا ہے۔اسی طرح ان لوگوں نے اس بات پر بھی اتفاق کیا ہے کہ منسلک جماعتوں کے رہنما کونسل کی قیادت کی نمائندگی کریں گے اور کونسل باہمی اتفاق رائے سے اپنے فیصلے صادر کرے گی۔

         ترکی کی سرحد کے قریب گورنریٹ "حلب” کے شمال میں واقع شہر "اعزاز”  کے ایک پر ہجوم بازار میں ہویے ایک زبردست بم دھماکہ میں 60 لوگوں کے ہلاک ہونے اور دسیوں کے زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے اور تنظیم داعش کو براہ راست اس دھماکہ کا ملزم قرار دیا گیا ہے۔

         "سپتنک” نامی روسی ایجنسی نے اس بات کی اطلاع دی ہے کہ بم دھماکہ کے ہلاک شدگان میں "احرار الشام” کے مسلح افراد کی بڑی تعداد ہے۔ اسی طرح اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ ان کے 50 افراد ہلاک یا زخمی ہوئے ہیں۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>