"آستانہ" کی کانفرنس میں شرکت کے لئے شامی حزب اختلاف کی طرف سے چند شرائط - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 12 جنوری, 2017
0

"آستانہ” کی کانفرنس میں شرکت کے لئے شامی حزب اختلاف کی طرف سے چند شرائط

2

گزشتہ سال 23 دسمبر کو داعش سے شہر کو آزاد کرانے کے لئے ” درع الفرات” نامی آپریشن کے ضمن میں ” ریف حلب” کے "الباب” نامی شہر کے ارد گرد تحریک "احرار الشام” کے فوجی گشت کرتے ہوئے

بیروت: كارولين عاكوم

         23 جنوری کو قزاقستان کی دارالحکومت آستانہ میں منعقد ہونے والی کانفرنس میں شرکت کے لئے شامی حزب اختلاف نے کل انقرہ میں ترکی کے ساتھ ہوئی بات چیت کے دوران شرائط کے مسودہ کو پیش کیاہے۔

        گزشتہ روز حزب اختلاف کی طرف سے منعقدہ ایک اجلاس میں طے شدہ شرائط میں بنیادی طور پر اس بات کا ذکر ہے کہ مکمل طور پر جنگ بندی کا نفاذ ہو،  پورے شام میں فائر بندی ہو اور اسی طرح مذاکرات میں حزب اختلاف کی سیاسی پارٹی کو شامل کیا جائے جبکہ اس سے قبل ماسکو کی کوشش یہ تھی کہ ایک ایسے فوجی وفد پر اکتفاء کیا جائے جس میں حزب اختلاف کے نمائندے شامل ہوں۔

         آزاد آرمی  کے سیاسی بیورو کے ایک رکن زکریا ملاحفجي  نے اس بات کی طرف اشارہ کیا ہے کہ حزب اختلاف کی شرائط سے متعلق روس کی موافقت ہی آستانہ کی کانفرنس میں حزب اختلاف کی شرکت اور عدم شرکت کا حتمی فیصلہ کرے گی۔

        انہوں نے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہوئے اس بات کی وضاحت کی ہے کہ مختلف سیاسی اور فوجی قوتوں سے تعلق رکھنے والے سو افراد نے حزب اختلاف اور اعلی اتھارٹی کے درمیان منعقدہ آستانہ کی کانفرنس میں حزب اختلاف کے وفد کو  شامل کئے جانے کی ضرورت پر اتفاق کیا ہے۔

        متفقہ شخصیت کی صدارت میں جانبین کی طرف سے ایک وفد کی تشکیل دی جائے گی اور انقرہ کے اجلاس کے ایجنڈوں کی بنیاد ہی یہی ہے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>