کیمیکل کی وجہ سے شامی حکام پر امریکی پابندیاں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 13 جنوری, 2017
0

کیمیکل کی وجہ سے شامی حکام پر امریکی پابندیاں

1

واشنگٹن: ہبہ قدسی

        ریاست ہائے متحدہ امریکہ نے پہلی بار بڑے پیمانے پر کیمیائی ہتھیار کے استعمال کرنے کی وجہ سے دمشق کی حکومت کے فوجی شعبوں میں حکام پر پابندیاں عائد کرنے کا اقدام کیا ہے۔ محکمۂ خزانہ کی طرف سے عائد کردہ پابندیوں میں آرمی، نیوی، ایئر فورس، ایئر ڈیفنس فورسز اور ری پبلکن گارڈ کے 18 اعلی حکام شامل ہیں اور ان کے علاوہ مذکورہ پابندیوں میں تکنیکی صنعتیں بنانے والی شامی تنظیم بھی شامل ہے۔

      کل وائٹ ہاؤس میں قومی سلامتی کونسل کے ترجمان نیڈ پرائس نے اقوام متحدہ کے تمام ارکان اور روس سمیت کیمیائی ہتھیاروں کی پابندی پر اتفاق کرنے والے ممالک کو اس بات پر آماہ کیا ہے کہ وہ سلامتی کونسل میں محاسبہ کئے جانے کے سلسلہ میں کی جانے والی کوششوں کی حمایت کریں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ بین الاقوامی برادری کو یہ واضح کرنا چاہئے کہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال ناقابل قبول ہے اور اس کی خلاف ورزی کرنے والوں کو اپنے اعمال کی وجہ سے بڑی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔

        کل انقرہ میں شامی حزب اختلاف کے نمائندوں کی ترکی اور روس کے ذمہ داروں کے ساتھ ملاقات ہوئی اور آپس میں یہ گفتگو ہوئی کہ فائر بندی کی یقین دہانی کرائی جائے، موجودہ فوجی نقشہ میں تبدیلی نہ کی جائے، جبری نقل مکانی کی منصوبہ بندی کو روکا جائے اور خاص طور پر ریف دمشق اور مشرقی غوطہ کی صورتحال کو بحال کیا جائے، پھر 23 جنوری کو "استانہ” میں منعقد ہونے والی کانفرنس میں شرکت کرنے کے موضوع  پر گفتگو کی جائے لیکن اس شرط کے ساتھ کہ جنیوا کانفرنس میں ہوئے مذاکرات کو نظرانداز کرنے کی کوشش نہ کی چائے۔

        اپوزیشن کے ذرائع نے اس بات پر وزر دیا ہے کہ سو شخصیت پر مشتمل اس کے وفد نے جنگ بندی اور فوجی نقشہ سے متعلق شرائط پیش کر دیا ہے کیونکہ انہیں شرائط کے پورا ہونے پر "آستانہ” میں ہونے والی کانفرنس میں شرکت اور عدم شرکت موقوف ہے اور ان شرائط میں یہ بھی ہے کہ حزب اختلاف کے وفد کے موضوع پر گفتگو کو مؤخر کیا جائے اور اس سلسلہ میں فیصلہ لینے اور اس پر اتفاق کرنے کے معاملہ کو حزب اختلاف کی سیاسی اور فوجی جماعتوں کے درمیان چھوڑ دیا جائے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>