موصل یونیورسٹی تلاشی اور کیمیائی مواد ضبط - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 15 جنوری, 2017
0

موصل یونیورسٹی تلاشی اور کیمیائی مواد ضبط

1484420290030582700

 

موصل: "الشرق الاوسط”

       کل عراقی افواج نے مسلسل دوسرے روز بھی موصل یونیورسٹی کی عمارتوں کی تلاشی جاری رکھی، جس پر پرسوں پچھلے پہر دھاوا بولا گیا تھا، اس دوران کیمیائی مواد قبضہ میں لے لیا گیا جسے تنظیم ہتھیار بنانے کے لئے استعمال کرنے والی تھی۔ انسداد دہشت گردی کے سربراہ عبد الوہاب الساعدی نے انکشاف کیا کہ کیمیکل سے بھرے نو ڈرم قبضہ میں لے لئے گئے ہیں جنہیں "داعش” ہتھیار بنانے کے لئے استعمال کرنے والی تھی۔

      دوسری طرف موصل میں بائیں جانب تنظیم داعش کے زوال کے ساتھ غیرملکی شوٹرز اور خودکش بمبار باقی رہ جانے والے جنگوؤں کے لئے ریڑھ کی ہڈی ثابت ہو رہے ہیں۔

      جنگی علاقوں کے دورہ کے دوران وہاں کے رہائشی افراد نے "رویٹرز” ایجنسی سے بات کرتے ہوئے جنگی واقعات کے بارے میں بتایا۔ ان میں سے "ابو رامی” نامی ایک شخص نے بتایا کہ "داعش” کیسے اپنے جنگجوؤں کے درمیان کام کو تقسیم کرتی ہے، جیسے ایک گروپ دھماکہ خیز مواد نصب کرتا ہے، دوسرا گروپ شوٹرز پر مشتمل ہوتا ہے اور ایک گروپ راستے کی راہمنائی کرتا ہے۔ اس نے کہا کہ شوٹرز عمومی طور پر روسی، چیچن یا افغانی ہوتے ہیں، جبکہ عراقیوں میں سے اکثریت کا تعلق موصل اور اس کے قریبی شہر تلعفر سے ہے۔ یہ ان کے پاس موٹر سائیکلوں پر آتے ہیں اور انہیں جہاں تعینات کیا جا سکتا ہے ان علاقوں کے بارے میں خبر پہنچاتے ہیں۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>