"ڈاووس" کے اجلاس کا آغاز اور "چینی عہد" - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: بدھ, 18 جنوری, 2017
0

"ڈاووس” کے اجلاس کا آغاز اور "چینی عہد”

نو منتخب امریکی صدر کے سعودی عرب کے ساتھ طویل المیعاد تعلقات متوقع ہیں: ٹرمپ کے معاون "الشرق الاوسط” سے
W6JW5J6W56JW56J

                                                    چینی صدر چی جن بینگ

 

ڈاووس: نجلا حبريری

      آج عالمی اقتصادی فورم کے 47 ویں سیشن کا پہلا روز "امتیازی حیثیت کے ساتھ چینی” رہا، جب کہ بعض شرکاء کو اس سوال پر مجبور کر دیا کہ کیا دنیا حقیقت میں "چینی عہد” کی جانب بڑھ رہی ہے۔

      چینی صدر چی جن بینگ نے فورم کے اپنے پہلے ہی دورہ پر جم غفیر کے سامنے عالمگیریت کے شاندار دفاع  کی روشنی میں فورم کو اپنے نام کر لیا، جس میں نو منتخب امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ پر تنقید اور اس کے اثرات کو بار بار دہرایا گیا۔

      شرکاء اس جانب متوجہ ہوئے کہ وہ شخص جو عالمگیریت کی دفاعی جنگ لڑ رہا ہے وہ خود بھی چینی کیمونسٹ پارٹی کا لیڈر اور ماؤزے تنگ کا وارث ہے۔ چینی صدر نے اس بات پر زور دیا کہ کشادگی کی پالیسی نے چین کو پوری دنیا کی دوسری بڑی معیشت بنایا ہے اور لاکھوں چینیوں کو غربت سے نکالا ہے۔

      دوسری جانب، ٹرمپ کے معاون انتونی سکاراموچی ظاہر ہوئے؛ جو کہ ابھی تک نئے امریکی ادارے کے "غیر سرکاری” ترجمان ہیں، انہوں نے ٹرمپ کی پالیسیوں کا دفاع کیا۔ دوسری جانب انہوں نے "الشرق الاوسط” سے بات کرتے ہوئے اشارہ کیا کہ مملکت سعودیہ کے پاس باہمت نوجوان قیادت ہے اور نو منتخب صدر کو سعودی عرب اور امریکہ کے درمیان طویل المدتی دوطرفہ تعلقات کے بارے میں علم ہے۔

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>