اگر مالکی حکومت میں آئے تو میں صوبے کی آزادی کا اعلان کر دوں گا : بارزانی "الشرق الاوسط" سے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
غسان شربل
به قلم:
کو: پیر, 23 جنوری, 2017
0

اگر مالکی حکومت میں آئے تو میں صوبے کی آزادی کا اعلان کر دوں گا : بارزانی "الشرق الاوسط” سے

پیر 25 ربيع الثانی 1438 ہجری­ 23 جنوری 2017ء  شمارہ: (13936)

news-220117-1

 

ڈیووس: غسان شربل

       عراقی صوبۂ کردستان کے صدر مسعود بارزانی نے کہا ہے کہ ابھی تک موصل کی کاروائی میں جو کچھ حاصل ہوا ہے اسے تنظیم داعش کے لئے ایک سنگین دھچکا کہا جا سکتا ہے۔ انہوں نے حل کے لئے موصل کی آخری جنگ کے ممکنہ وقت کے تعین پر قیاس آرائی  کرنے سے انکار کر دیا۔ انہوں نے کہا کہ "داعش” کے خلاف "پیشمرگہ” کاروائی کی ابتداء سے اب تک ہلاکتوں کی تعداد 1668 اور زخمیوں کی تعداد 9725 ہے جن میں تنظیم کے ہلاک شدگان کی تعداد 15 ہزار ہے۔

      بارزانی نےڈیووس عالمی اقتصادی  کانفرنس میں شرکت کے دوران "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہوئے یہ بیان دیا۔

      انہوں نے اپنے قریبی دوست اور ساتھی ہوشیار زیباری کی حکومت ختم کرنے اور پیسوں سے بھرے بیگ کے بارے میں وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ یہ انہیں عراقی وزیراعظم حیدر العبادی اور موصل کاروائی کے خلاف دیا گیا تھا۔ تاکہ العبادی کی حکومت ختم کرکے اور موصل کاروائی کو ناکام بنا کر نوری المالکی کو دوبارہ وزیراعظم کے عہدہ پر لایا جائے۔

      انہوں نےالمالکی کی واپسی کی صورت میں اپنے مؤقف کے بارے میں بتایا کہ: "اگر المالکی وزیراعظم بنے تو میں اسی لمحہ کردستان کی آزادی کا اعلان کر دوں گا اور ایسا کسی سے بھی رابطہ کئے بغیر کیا جاسکتا ہے۔۔۔ مالکی کی حکومت میں عراق کے ساتھ رہنا ممکن نہیں”۔

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>