فلسطین کی طرف سے نتنیاہو کے مذاکرات کی شرطیں ناقابل قبول - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 27 جنوری, 2017
0

فلسطین کی طرف سے نتنیاہو کے مذاکرات کی شرطیں ناقابل قبول

اسرائیلی شہریوں اور فوجیوں کو نشانہ بنانے والی چار کاروائیاں
جمعة ­29 ربيع الثاني 1438 ہجری 27 جنوری 2017 مـ شمارہ نمبر [13940[
1

ایک فلسطینی کل خلیل شہر کے شمالی دروازے پر فلسطینیوں کی لاشوں کی واپسی کے مطالبہ میں مظاہروں کے دوران اسرائیلی فوجیوں کے بیریر پر پتھر پھیکتا ہوا

رام الله: كفاح زبون

        کل فلسطینی حکومت نے فلسطین کے باشندوں کے ساتھ  اسرائیلی وزیر اعظم نتنیاہو کے دوبارہ مذاکرات کی شرطوں کی مکمل طور پر تردید کی ہے اور یہودی حکومت اور ضفہ غربیہ کے علاقوں پر پولس کے مسلسل قبضہ کے سلسلہ میں اسے دھمکی بھی دی ہے اور اس بات کا بھی اظہار کیا ہے کہ فلسطینی عوام کا اسرائیل کو ایک یہودی ملک اور اردن کی نہر سے لے کر بحر متوسط تک کے علاقوں پر اسرائیلی پولس کے قبضہ کو اعتراف کرنا یہ دونوں ایسے بنیادی مسائل ہیں جن سے امن وسلامتی کے مذاکرات کے لئے تنازل اختیار نہیں کیا جا سکتا ہے۔

       فلسطینی حکومت نے فوری طور پر ان شرطوں کو بے معنی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ ان کا جواب دینا ضروری نہیں ہے۔ فلسطینی وزیر خارجہ ریاض مالکی نے کہا کہ یہ شرطیں غیر موزوں ہیں۔ نتنیاہو کسی بھی فلسطینی کو نہیں پائیں گے خواہ وہ کوئی بھی ہو کہ وہ ان کے ساتھ ان شرطوں کے باوجود تعامل کرنے کے لئے تیار ہو ۔ فلسطینی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ اسے توقع ہے کہ بین الاقوامی برادری احتلال کی حکومت کا پردہ فاش کرے۔

       یہ پہلا موقعہ نہیں ہے کہ نتنیاہو یہ اصرار کر رہے ہیں کہ فلسطین کے باشندے ایک یہودی حکومت کا اعتراف کر لیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ ضفہ غربیہ میں پولس کے مسئلہ سے ہر گز تنازل اختیار نہیں کریں گے اور امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے حکومت میں آنے کے بعد یہ اپنی نوع کا ایک پہلا اعلان ہے۔ فلسطین کے باشندے سیاسی، تاریخی اور قانونی وجوہات کی بنا پر اسرائیل کو ایک یہودی ملک کے طور پر اعتراف کرنے سے انکار کرتے ہیں اور وہ کہتے ہیں کہ وہ فلسطینی ملک کے قیام کے بعد اس کی سرزمیں پر کسی بھی اسرائیلی فوجی کے وجود کو ہرگز قبول نہیں کریں گے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>