واشنگٹن میں "الاخوان المسلمون" کو دہشت گرد جماعت قرار دینے کے سلسلہ میں غور وخوض - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 28 جنوری, 2017
0

واشنگٹن میں "الاخوان المسلمون” کو دہشت گرد جماعت قرار دینے کے سلسلہ میں غور وخوض

ہفتہ 30 ربيع الثانی 1438ہجری/ 28 جنوری 2017ء شمارہ نمبر {13941}
3

ایک سال قبل مصری سیکورٹی فورسز کی طرف سے اخوان المسلمون کے ایک گروپ کے گھر پر چھاپہ مارنے کے وقت قاہرہ کے مضافاتی علاقے میں ہوئے ایک بم دھماکہ کے بعد کا منظر (گیٹی)

واشنگٹن: ہبہ قدسی

        امریکی ذمہ داروں اور صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے قریبیوں نے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ ان کی انتظامیہ "الاخوان المسلمون” پر امریکی پابندیاں عائد کرنے اور ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں دہشت گرد تنظیموں کی فہرست میں شامل کرنے کے سلسلہ میں غور وخوض کر رہی ہے۔

        روئٹر ایجنسی نے امریکی انتظامیہ کے ذرائع کے حوالہ سے نقل کیا ہے کہ ٹرمپ کے قومی سلامتی کے مشیر مائکل فلائن کی قیادت میں ایک جماعت کی یہ خواہش ہے کہ "الاخوان المسلمون” کو غیر ملکی دہشت گرد تنظیموں کی امریکی وزارت خارجہ اور وزارت خزانہ کی فہرست میں شامل کر دیا جائے۔ ٹرمپ کے مشیر نے "الاخوان المسلمون” کو دہشت گردی کی فہرست میں شامل کرنےکے سلسلہ میں اپنی تائید کا اظہار کیا ہے اور تاکید کی ہے کہ یہ معاملہ ابھی زیر بحث ہے۔

        موضوع کی حاسیت کی وجہ سے اپنا نام کا انکشاف نہ کرنے کا مطالبہ کرنے والے مشیر نے مزید کہا ہے کہ فلائن کی ٹیم نے "الاخوان المسلمون” کو دہشت گرد تنظیموں کی امریکی فہرست میں شامل کرنے کا عزم مصمم کر لیا ہے لیکن انہوں نے یہ بھی کہا کہ ابھی مکمل طور پر واضح نہیں ہے کہ اس سلسلہ میں انتظامیہ کب اور کیسے قدم اٹھائے گی۔ اس سلسلہ میں ابھی وائٹ ہاؤس خاموش ہے اور ابھی اس کے ذریعہ کوئی سرکاری تبصرہ صادر نہیں ہوا ہے۔

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>