امریکہ کے اندر مظاہروں کی لہر اور معرکہ آرائی - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
به قلم:
کو: منگل, 31 جنوری, 2017
0

امریکہ کے اندر مظاہروں کی لہر اور معرکہ آرائی

منگل­ 4 جمادى الأولى 1438 ہجری­ 31 جنوری 2017 ء شمارہ: (13944)
1485803280281634100

کل وائٹ ہاؤس کے دفتر میں ٹرمپ چھوٹے اداروں کے لئے قواعد و ضوابط کو کم کرنے کے مطالبہ کی ایک قرارداد پر دستخط کرنے کے بعد (ا۔ب)

 

واشنگٹن: ہبہ قدسی – محمد صالح الملحم

     مذمتی مظاہروں کی لہر وسعت اختیار کر گئی ہے جو کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی طرف سے 90 روز کے لئے 7 اسلامی ممالک کے باشندوں کو امریکی سرزمین میں داخلے پر پابندی کے فیصلہ پر ہیں، پابندی کو ختم کرنے کے لئے یہ مظاہرے امریکی عدالتوں اور کانگرس کے اندر مضبوطی کے ساتھ ابھر کر سامنے آئے۔ 16 امریکی ریاستوں میں انصاف کے وزراء (استغاثہ) نے ایک مشترکہ بیان میں اس فیصلہ کی مذمت کی اور "دستیاب تمام وسائل کے ساتھ اس کو چیلنج” کرنے کا عزم۔

     ریاست واشنگٹن کے اٹارنی جنرل "پوپ فرگوسن” نے کہا کہ امریکی حکام نے کو کہا ہے اسے چیلنج کرنے کے لئے ریاست وفاقی عدالت کا سہارا لے گی۔ جبکہ سفارت کاروں کی ایک بڑی تعداد نے ٹرمپ طرف سے جاری کردہ حکم پر ایک احتجاجی نوٹس جاری کیا ہے۔

     کانگرس میں، ڈیموکریٹک قانون سازوں کی ایک بڑی تعداد نے اس فیصلہ کو ختم کرنے کے لئے ووٹنگ کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔ ان قانون سازوں میں سے ایک "کرسی مرفی” نے یہ تجویز پیش کی کہ ٹرمپ  کے تجویز کردہ وزراء کے انتخاب کی توثیق کو غیر فعال بنانے کے لئے مجوزہ سیشن کو معطل کر دیا جائے، تاکہ اس دباؤ کے تحت وہ اپنی قرار داد واپس لیں۔

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>