ایرانی رویے کا سامنا کرنے کے لئے "میونخ" میں علاقائی – امریکی اجلاس - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: پیر, 20 فروری, 2017
0

ایرانی رویے کا سامنا کرنے کے لئے "میونخ” میں علاقائی – امریکی اجلاس

news-190217-2

سعودی عرب کے وزیر خارجہ کل میونخ میں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے (رویٹرز)

 

انقرہ: سعيد عبد الرازق – ميونخ: "الشرق الاوسط”

      کل میونخ سیکورٹی کانفرنس کے آخری دن کی کاروائی میں ایران کی وجہ سے خطے میں بڑھتے ہوئے عدم استحکام پر کئی ایک شرکائے اجلاس نے تنقید کی۔ اس دوران سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبیر نے اس بات پر زور دیا کہ تہران ہی "پوری دنیا میں دہشت گردی کی پشت پناہی کرنے والا ہے اور یہی طاقت مشرق وسطی کے استحکام کو خراب کرنے والی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کی "تہران ہی تباہ کرنا چاہتا ہے اور جب تک ایران اپنا رویہ نہیں بدلتا اس وقت تک اس کے ساتھ تعاون کرنا انتہائی مشکل ہے۔”

      اسی طرح ترکی کے وزیر خارجہ مولود جاویش اوغلو نے ایران پر الزام عائد کیا کہ وہ خطے کے امن وسلامتى کو خراب کر رہا ہے اور شام وعراق میں "شیعہ مسلک” کو پھیلا رہا ہے۔” انہوں نے نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ "بحرین اور سعودی عرب کو کمزور کرنے کے لئے ایران فرقہ ورانہ پالیسیوں کو استعمال کر رہا ہے۔”

      دوسری جانب ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے جاویش اوغلو کے بیان پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ بات "غیر حقیقی” ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ "جو سلطنت کے قیام کا خواب دیکھ رہے ہیں اور غیر قانونی مداخلت کرتے ہوئے خون ریزی اور بڑھتی ہوئی کشیدگی کی وجہ ہیں، وہ آگے بھاگ کر اپنی ان ذمہ داریوں سے چھٹکارا حاصل نہیں کر سکتے۔”

پیر­ 24 جمادى الاول 1438 ہجری ­ 20 فروری 2017 ء  شمارہ: (13964)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>