داعش کا موصل سے نکلنے کا کوئی امکان نہیں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 2 مارچ, 2017
0

داعش کا موصل سے نکلنے کا کوئی امکان نہیں

2

عراقی شہریوں نے جنگوں سے فرار اختیار کرتے ہوئے کل موصل کے مغرب میں واقع مامون کے علاقے میں اپنے گھروں کو خیر آباد کہ دیا

موصل: دلشاد عبد اللہ

        شہر اور تلعفر کے درمیان راستہ پر عراقی فورسز کا قبضہ ہو جانے کے بعد تنظیم داعش مکمل طور پر موصل کے مغربی علاقہ میں محصور ہو چکی ہے جبکہ فرار ہونے کا یہی آخری راستہ تھا۔

        ایک جنرل نے "روئٹرز” ایجنسی کو بتایا ہے کہ موصل کے شمالی مغرب کے  مدخل "شام دروازہ” کے ایک کیلو میٹر کی دوری پر فوج میں نویں بکتر بند ڈویزن کے فوجی پہنچ چکے ہیں جبکہ وفاقی پولس فورسز اور انسداد دہشت گردی فورسز نے شہر کے جنوب مغرب سے اپنی پیش رفت شروع کر دی ہے۔

        جلد جواب دینے والی ٹولی میں میڈیا کے ذمہ دار کیپٹن فراس زبیدی نے "الشرق الاوسط” سے بتایا ہے کہ موصل کے مرکزی علاقہ کے "دواسہ” علاقہ میں واقع سرکاری اکیڈمی ٹولی کی آگ کا نشانہ بن چکی ہے۔ وفاقی پولس کمانڈر رائد شاکر جدوت نے "الشرق الاوسط” سے کہا ہے کہ بموں سے لیس وفاقی پولس کے جہازوں نے دواسہ کے علاقہ میں 71  دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔

جمعرات 3 جمادی الثانی 1438 ہجری – 2 مارچ 2017ء شمارہ نمبر {13974}

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>