پوٹن اور روحانی کا سیاست سے گریز اور معیشت پر توجہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 29 مارچ, 2017
0

پوٹن اور روحانی کا سیاست سے گریز اور معیشت پر توجہ

1490720054205452400

روسی صدر ولاڈیمیر پوٹن کل کریملن میں اپنے ایرانی ہم منصب حسن روحانی کا خیر مقدم کرتے ہوئے (ا۔ف۔ب)

 

ماسکو: طہ عبد الواحد

     روسی صدر ولادیمیر پوٹن اور ایرانی صدر حسن روحانی دونوں نے کل ماسکو میں اپنی گفتگو کے دوران سیاسی اختلافات پر بات کرنے سے گریز کرتے ہوئے معاشی فائلوں پر توجہ دی۔ اس دوران جانبین نے کئی ایک شعبوں میں تعاون کے اتفاقات پر دستخط کئے، جن میں جوہری، توانائی اور کمیونیکیشن کے شعبہ جات بھی شامل ہیں۔

     پوٹن اور روحانی کی موجودگی میں ایک سرکاری ماحول کے دوران طرفین نے دو طرفہ تعلقات میں فروغ کی خاطر وسیع تر شعبہ جات کے 16 معاہدوں پر دستخط کئے۔ جن میں توانائی اور مواصلات کے شعبہ پر توجہ دی گئی اور سب سے زیادہ اہم "بوشہر” میں روسی فریق کے تعاون سے جوہری پلانٹ کے دو نئے یونٹس کی تعمیر پر معاہدے تھے۔ اسی طرح روسی جوہری توانائی کی ایجنسی "روس ایٹم” (Rosatom) اور ایرانی جوہری توانائی کی تنظیم کے مابین جوہری مواد کی منتقلی سمیت گیس کی ترسیل، تیل کی تلاش میں مشترکہ عمل اور بجلی کے ذریعے چلنے والے ایرانی ریلوے نیٹ ورک کی فراہمی کی مفاہمتی یاد داشت پر دستخط کئے گئے۔

بدھ 1 رجب 1438 ہجری­ 29 مارچ 2017ء  شمارہ: (14001)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>