ٹرمپ شام میں فوجی آپشن کا جائزہ لے رہے ہیں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق الاوسط
کو: جمعہ, 7 اپریل, 2017
0

ٹرمپ شام میں فوجی آپشن کا جائزہ لے رہے ہیں

"کیمیائی ادلب” کے مذمتی منصوبے پر رائے شماری کے لئے سلامتی کونسل میں مشاورت
1491497890347428300

کل ڈوما میں وقفہ کے دوران شامی بچے اور شہری دفاع کے رضاکار حالیہ کیمیائی حملے کے مذمتی بینرز اٹھائے ہوئے (ا.ب.ا)

 

واشنگٹن ـ انقرہ: "الشرق الاوسط”

       کل ایک اہم امریکی عہدیدار نے کہا کہ صدر ڈونالڈ ٹرمپ امریکی وزارت دفاع کی جانب سے پیش کردہ شام کے بارے میں مختلف فوجی آپشنز پر غور کر رہے ہیں۔ جو گذشتہ منگل کے روز شام کے گورنریٹ ادلب کے شہر خان شیخون پر شامی حکومتی فوج کی طرف سے حملے کے جواب میں ہے، جس کے دوران درجنوں شہریوں نے اپنی جانیں گنوا دیں اور اس کے بارے میں شک ہے کہ یہ حملہ کیمیائی تھا۔

     عہدیدار نے کہا کہ یہ آپشنز وائٹ ہاؤس کے مطالبہ پر پیش کئے گئے ہیں ان میں خاص طور سے شامی طیاروں کی پروازوں کو متاثر کرنا شامل ہے۔ جبکہ وائٹ ہاؤس نے کہا ہے کہ ٹرمپ شام کے بارے میں اپنے فیصلوں یا آپشنز کو ان پر عمل درآمد سے قبل ظاہر نہیں کریں گے۔

     دریں اثناء ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کہا ہے کہ ترکی شام میں ممکنہ امریکی فوجی آپریشن کی حمایت کرے گا۔ انہوں نے کل ٹیلی ویژن پر انٹرویو دیتے ہوئے مزید کہا کہ اگر واشنگٹن شامی عوام کے مصائب کو روکنے کے لئے آپریشن کا فیصلہ کرتا ہے تو ترکی اس کی حمایت کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ امریکی صدر اپنے بیانات کو عملی جامہ پہنائیں گے۔

 جمعہ 10 رجب 1438 ہجری­ 07 اپریل 2017ء  شمارہ: (14010)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>