سلیمانی کردستان میں "ریاستی" منصوبہ ختم کرنے کی کوشش میں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 11 اپریل, 2017
0

سلیمانی کردستان میں "ریاستی” منصوبہ ختم کرنے کی کوشش میں

کرد رہنما "الشرق الاوسط” سے: ایرانی جنرل نے دھمکی دے رہے ہیں اور ڈرا رہے ہیں
1491839359303243200

                                                  جنرل قاسم سلیمانی

 

اربيل: دلشاد عبد الله

      دو کرد رہنما؛ جن میں سے ایک عراقی اور دوسرا ایرانی ہے، نے "الشرق الاوسط” کو انکشاف کیا ہے کہ ایرانی "قدس فورس” کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کردستان کی خود ارادیت کے ریفرنڈم کو روکنے اور کرد ریاست کے منصوبے کو ختم کرنے کے لئے کردستان کے شہر سلیمانیہ میں دو روز سے موجود ہیں۔

      سابق عراقی صدر جلال طالبانی کی سربراہی میں "کردستانی قومی اتحاد” کی ایک اہم قیادت نے یقین دہانی کی ہے کہ سلیمانی نے "قومی اتحاد” کی تمام ونگز کے رہنماؤں کے ساتھ بھرپور ملاقاتیں کیں ہیں۔ جس کے دوران ریفرنڈم کو ناکام بنانے پر توجہ مرکوز رہی اور "اتحاد” سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ صوبائی صدر مسعود بارزانی کے ساتھ اتفاق نہ کریں۔ رہنما نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی درخواست کے ساتھ مزید کہا کہ ایرانی جنرل "(اتحاد) کے رہنماؤں کے ساتھ ڈرانے اور دھمکانے کی زبان میں بات کرتے ہیں اور صوبۂ کردستان کو بھی دھمکی دی ہے”۔

منگل 14 رجب 1438 ہجری­ 11 اپریل 2017ء  شمارہ: (14014)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>