مثبت اعداد وشمار کی وجہ سے آستانہ میں مخالف جماعتوں کی شرکت قابل ترجیح - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 30 اپریل, 2017
0

مثبت اعداد وشمار کی وجہ سے آستانہ میں مخالف جماعتوں کی شرکت قابل ترجیح

1

دمشق کے مشرقی عوطہ میں واقع جوبر نامی علاقہ میں حملہ کے بعد اٹھتا ہوا غبار اور دھواں

بیروت: کارولین عاکوم

        شامی مخالف جماعتوں کے ذرائع نے "الشرق الاوسط” کے سامنے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ مخالف جماعتیں ان مثبت اعداد وشمار کی وجہ سے آئندہ بدھ کو آستانہ میں ہونے والے مذاکرات میں شرکت کریں گے جن کی وجہ سے فائربندی کو عمل میں لایا جائے گا اور نئے فریقوں کو شامل کیا جائے گا جبکہ اس سے پہلے یہ معاملہ روس، ایران اور ترکی پر منحصر تھا۔

        آستانہ کی طرف بھیجے گئے مخالف جماعتوں کے وفد کے ایک رکن جنرل فاتح حسون نے "الشرق الاوسط” سے کہا ہے کہ مذاکرات کے شیڈول میں نئے مثبت اسباب کو شامل کیا گیا ہے اور دعوت نامہ کے ساتھ انہیں غیر رسمی طور پر ہمارے پاس بھیجا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ کانفرنس کی نششتوں میں انہیں امور پر غور وفکر کیا جائے گا لیکن مخالف جماعتوں میں سے بعض جماعتوں نے دمشق کے غوطہ میں ایک طرف "لشکر اسلام” اور دوسری طرف "لشکر رحمن” اور "شام کو آزاد کرنے والی پارٹی” کے درمیان ہونے والی جنگوں کو متاثر ہونے کے سلسلہ میں آگاہ کیا ہے۔

اتوار 4 شعبان 1438ہجری –  30 اپریل  2017ء شمارہ نمبر {14033}

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>