یمن کے سفارتی حل کے لئے جرمنی حرکت میں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق الاوسط
کو: منگل, 2 مئی, 2017
0

یمن کے سفارتی حل کے لئے جرمنی حرکت میں

1493660264695383800

شيخ محمد بن زايد اور جرمن چانسلر مركل کل عرب امارات کے دارالحکومت ابو ظہبی میں (وام)

 

 

ابوظہبی – عدن: "الشرق الاوسط”

      کل جرمن خاتون چانسلر انجیلا مرکل نے یمن میں تنازعے کے پر امن حل تک رسائی کے لئے ریاض کی حمایت کے ساتھ سفارتی وسائل کے استعمال کے عزم کا اظہار کیا ہے۔ مرکل نے جدہ سے ابوظہبی پہنچنے پر بیان دیتے ہوئے کہا کہ خوش آیند بات یہ ہے کہ "سعودی عرب کی بھی یہ شرط یہ کہ سیاسی عمل اقوام متحدہ کی زیر نگرانی ہونا چاہیئے”۔ مرکل نے کہا کہ ان کے ملک نے "اقوام متحدہ کی زیر نگرانی ممکنہ خاص ڈپلومیٹک عمل کی حمایت کی پیشکش کی ہے۔۔۔ اور اب ہم اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتیرس کے ہمراہ اہم انتظامات کریں گے”۔ دریں اثناء یمن کے دارالحکومت صنعاء میں حوثی اور سابق صدر علی عبد اللہ صالح کی حمایتی دونوں باغی جماعتوں کے مابین ان کی "حکومت” کے اندرونی فیصلوں کی بناء پر لڑائی میں شدت آگئی ہے۔ یہ شدت خاص طور سے ان کی نام نہاد "سپریم پولیٹیکل کونسل” کے سربراہ صالح الصماد کی طرف سے ان کے حکومتی سربراہ عبد العزیز بن حبتور کے جاری کردہ تمام فیصلوں کو بے فائدہ قرار دیتے ہوئے مسترد کئے جانے کے بعد ہے۔

منگل 6 شعبان 1438 ہجری­ 02 مئی 2017ء  شمارہ: (14035)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>