عرب – اسلامی – امریکی شراکت داری انتہا پسندی اور ایران کا محاصرہ کر رہی ہے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: پیر, 22 مئی, 2017
0

عرب – اسلامی – امریکی شراکت داری انتہا پسندی اور ایران کا محاصرہ کر رہی ہے

تہران دہشت گردی کا سرغنہ : خادم حرمین – اور ٹرمپ کا اسے عالمی سطح پر تنہا کرنے کا مطالبہ

کل ریاض میں شاہ سلمان اور صدر ٹرمپ عرب اسلامی امریکی سربراہی اجلاس کے افتتاح سے قبل ایک یادگار تصویر میں عرب اور اسلامی ممالک کے سربرہان کے کے درمیان (ا.ف.ب)

 

رياض: عبد الہادی حبتور – نايف الرشيد

      کل ریاض میں عرب – اسلامی – امریکی سربراہی اجلاس؛ جس کا افتتاح خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اور دسیوں عرب و اسلامی ممالک کے رہنماؤں کی میں موجودگی میں کیا، اس دوران انتہا پسندی، دہشت گردی اور ایران کے خلاف مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا گیا اور انتہا پسندی سے نمٹنے کے لئے مرکز «اعتدال» کا افتتاح کیا گیا۔

      خادم حرمین شریفین نے افتتاحی خطاب کے دوران کہا کہ "ایرانی حکومت خمینی کے انقلاب سے لے کر آج کے دن تک عالمی سطح پر دہشت گردی کو تشکیل دے رہی ہے”، انہوں نے مزید کہا کہ "ہم خمینی انقلاب کے سر اٹھانے تک دہشت گردی اور انتہا پسندی سے واقف نہیں تھے”۔ انہوں نے کہا کہ "ایرانی حکومت، حزب اللہ، حوثی، داعش اور القاعدہ آپس میں ایک جیسے ہیں”۔ انہوں نے تہران پر الزام عائد کیا کہ "اس نے ہماری طرف سے نیک نیتی کے تحت اچھی ہمسائیگی کے اقدامات کو مسترد کیا اور توسیع پسندانہ عزائم و مجرمانہ طرز عمل کو اپناتے ہوئے دیگر ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت شروع کر دی۔ ایرانی حکومت نے ہماری خاموشی کو کمزوری اور حکمت عملی کو ہماری کمی تصور کیا، یہاں تک کہ اس کے طرز عمل پر ہمارے صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا ہے”۔۔۔

      امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنے خطاب کے دوران "عالمی دہشت گردی” کی ذمہ داری ایران پر عائد کی اور اسے عالمی سطح پر تنہا کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ "جو حکومت دہشت گردوں کو محفوظ ٹھکانہ اور مالی امداد فراہم کرتی ہے وہی خطے میں عدم استحکام کی اس سطح کی ذمہ دار ہے، میری مراد ایران ہی ہے۔ لبنان سے عراق اور یمن تک ایران ہی دہشت گردوں، ملیشیاؤں اور دیگر انتہا پسند جماعتوں کو خطے میں تباہی اور افراتفری پھیلانے کے لئے مالی امداد، ہتھیار اور تربیت فراہم کر رہا ہے”۔ ٹرمپ نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ ایران کو تنہا کریں، تاکہ ایرانی حکومت امن کی خاطر شراکت داری پر تیار ہو”۔۔ انہوں نے کہا کہ "تمام باضمیر ممالک کو چاہیے کہ وہ ایران کو تنہا کرنے میں ہمارا ساتھ دیں”۔

 

پیر 25 شعبان 1438 ہجری ­ 22 مئی 2017ء شمارہ: (14055)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>