یمن کو تین خطرات کا سامنا ہے : اقوام متحدہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 31 مئی, 2017
0

یمن کو تین خطرات کا سامنا ہے : اقوام متحدہ

سلامتی کونسل کے سامنے ولد شیخ کی سعودی عرب اور عالمی بنک کی امداد کی تعریف

                         حکومتی افواج کے عناصر شمال مٖغربی تعز کے علاقے میں (رویٹرز)

 

نیویارک: جوردن دقامسہ

      کل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے سامنے یمن کے لئے اقوام متحدہ کے ایلچی اسماعیل ولد شیخ نے اپنے خطاب کے دوران یمن کے بحران کے پرامن حل کی ضرورت پر زور دیا۔ دریں اثناء اسی اجلاس کے دوران بین الاقوامی تنظیم برائے انسانی امور کے سربراہ اسٹیفن اوبرائن نے کہا کہ یمن تین طرح کے خطرات سے دوچار ہے، جو کہ جنگ، قحط اور بیماری ہیں۔ انہوں نے بین الاقوامی برادری کی ناکامی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وہ ان خطرات کے خلاف صرف تماشائی کی صورت میں کھڑی ہے۔

       ولد شیخ نے کہا کہ وہ یمن کی قانونی حکومت اور صنعا کے حکام کے ساتھ مل کر یمن اور خاص طور سے حدیدہ شہر کی صورت حال کے بارے میں جائزہ لے رہے ہیں۔ دریں اثنا انہوں نے حدیدہ کے بارے میں اپنی پیش کردہ تجویز اور ملک بھر میں حکومتی ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی کے بارے میں بات چیت کرنے کے لئے انصار اللہ (حوثی) گروپ کی مذاکراتی کمیٹی میں شرکت نہ کرنے پر معذرت کی ہے۔

 

بدھ 5 رمضان المبارک 1438 ہجری­ 31 مئی 2017ء  شمارہ: (14064)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>