عراقی "عوامی فوج" اتحادیوں کا امتحان لے رہی ہے – اور پوٹن کو شام کی تقسیم کاری پر تشویش - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 2 جون, 2017
0

عراقی "عوامی فوج” اتحادیوں کا امتحان لے رہی ہے – اور پوٹن کو شام کی تقسیم کاری پر تشویش

        کل شامی حکومتی فوج کی بمباری کے بعد درعا سے دھواں اٹھ رہا ہے (درعا نیٹ ورک)

 

بيروت: بولا اسطيح ـ ماسکو: طہ عبد الواحد

      کل عراقی "عوامی فوج” نے بین الاقوامی اتحاد؛ جو کہ خطے میں عرب اور کرد جنگجوؤں کو تحفظ فراہم کر رہا ہے، ان کا امتحان لینے کی خاطر گھنٹوں تک  شام کے مشرقی علاقوں کے اندر داخل رہیں، جبکہ "عوامی فوج” کے ترجمان احمد الاسدی نے اپنی افواج کا شام میں داخل ہونے سے انکار کیا ہے، دریں اثناء "شام میں انسانی حقوق کی رصد گاہ” نے تصدیق کی ہے کہ "عوامی افواج” گورنریٹ حسکہ کے ایک گاؤں میں کچھ دیر کے لئے داخل ہوئی اور پھر اس سے انخلا کیا۔ شام کے نیوز نیٹ ورک "الخابور” کے مطابق "عوامی فوج” نے؛ خطے سے تنظیم داعش کے اچانک انخلا کے بعد، صبح سویرے حسکہ کے جنوب مشرقی دو گاؤں قصیبہ اور بواردی پر کنٹرول سنبھالا۔ نیوز نیٹ ورک کے مطابق "عراقی عوامی فوج” 10 کلومیٹر کے علاقے تک داخل ہوئی تھی۔۔۔

      دوسری جانب روسی وزارت دفاع نے اپنے جاری بیان میں کہا ہے کہ تیس مئی کی رات گاڑیوں کے تین قافلے رات کی تاریکی میں رقہ شہر سے نکل کر انتہائی جنوبی سمت روانہ ہوئے۔ ان کا پیچھا کیا گیا اور ان پر فضائی حملہ کیا گیا جس میں 80 سے زائد افراد ہلاک ہوئے۔ کل روسی صدر ولادیمیر پوٹن نے پیڑزبرگ بین الاقوامی اقتصادی کانفرنس کے موقع پر کہا کہ "شام کی تقسیم کا امکان تشویشناک ہے”۔

 

جمعہ 7 رمضان المبارک 1438 ہجری­ 02 جون 2017ء  شمارہ: (14066)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>