دوحہ کی پالیسیاں اسے تنہائی میں غرق کر رہی ہیں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 6 جون, 2017
0

دوحہ کی پالیسیاں اسے تنہائی میں غرق کر رہی ہیں

سعودی عرب، بحرین، متحدہ عرب امارات، مصر اور یمن اس کے ساتھ تعلقات منقطع کر رہی ہیں – اور واشنگٹن کی قطر کے "رویوں” پر "تشویش”

 

رياض ـ قاہرہ ـ منامہ ـ ابوظہبی: "الشرق الاوسط”

      کل سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین، مصر اور یمن نے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات ختم کر دیئے اور دہشت گردی کی حمایت کرنے والی پالیسیوں کے پس منظر میں اس ملک کو تنہا کرنے کے لئے دیگر اقدامات اٹھائے۔ قطر کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات میں زمینی اور سمندری سرحدوں کو بند کرنے، فضائی حدود میں پروازوں پر پابندی سمیت افراد کی نقل و حرکت پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر میں موجود قطر کے سفارتی عملے کو 48 گھنٹوں کی مہلت میں ملک چھوڑنے کا حکم دیا گیا، جبکہ سعودیہ ، امارات اور بحرین نے قطر کے شہریوں کو 14 دنوں کے اندر ملک چھوڑے کا حکم دیا ہے اور انہوں نے اپنے شہریوں کو قطر جانے سے منع کر دیا ہے۔

      ریاض نے "دوحہ کے حکام” پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ "خطے کے استحکام کو نشانہ بنانے والی جماعتوں اور متعدد فرقوں کو پناہ دے رہے ہیں، جن میں اخوان المسلمین، داعش اور القاعدہ شامل ہیں۔ علاوہ ازیں سعودیہ عرب اور بحرین میں "ایران کی حمایت یافتہ دہشت گرد جماعتوں کی سرگرمیوں” کی حمایت کرتے ہیں۔

 

منگل 11 رمضان المبارک 1438 ہجری­ 06 جون 2017ء  شمارہ: (14070)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>