لندن میں آگ کے متاثرین کی تعداد میں نمایاں اضافے کے خدشات - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 16 جون, 2017
0

لندن میں آگ کے متاثرین کی تعداد میں نمایاں اضافے کے خدشات

 

لندن: "الشرق الاوسط”

      کل برطانوی دارالحکومت لندن میں پولیس سربراہ سٹیورٹ کونڈی نے کہا ہے کہ شہر کے مغربی جانب واقع ایک رہائشی ٹاور میں بروز بدھ بھڑکنے والی آگ کی وجوہات پر تحقیق میں کئی ماہ لگ سکتے ہیں۔ انہوں نے متاثرین کی تعداد میں نمایاں اضافے کے خدشات کا اظہار کیا۔ یاد رہے کہ کل تک ہلاک شدگان کی تعداد 17 تھی۔

      24 منزلہ جلے ہوئے ٹاور کی عمارت پر تحقیق کے آغاز کے ساتھ ہلاک شدگان کی تعداد میں اضافے کا اندیشہ ہے۔ اس عمارت میں تقریبا 600 افراد رہائش پذیر تھے جن کی بڑی تعداد منگل اور بدھ کی درمیانی رات اس بھیانک حادثہ کے وقت اس میں موجود تھی۔ کونڈی نے مزید کہا کہ عمارت کی حفاظت پر مامور ایک ماہرانہ ٹیم وہاں موجود رہی یہاں تک کہ فائر برگیڈ کے عملے اور سراغرساں کتوں نے اپنی تفتیش مکمل کر لی۔ انہوں نے کہا کہ "تحقیقی کاروائی سست اور نازک عمل ہے”۔ کونڈی سے جب حتمی تعداد کے بارے میں سوال کیا گیا کہ یہ تعداد درجنوں میں ہوگی یا سینکڑوں میں؟ تو انہوں نے کہا: "یہ تعداد سینکڑوں میں ہونے کی امید نہیں ہے”۔

جمعہ 21 رمضان المبارک 1438 ہجری ­ 16 جون 2017ء  شمارہ: (14080)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>