قطر کے خلاف شکایات کی چار جہتی فہرست تیار - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 17 جون, 2017
0

قطر کے خلاف شکایات کی چار جہتی فہرست تیار

شاہ سلمان کا ترک وزیر خارجہ کا خیر مقدم اور ان کے ہمراہ "خطے کی پیش رفت” کا جائزہ

خادم حرمين شريفين کل مکہ مکرمہ میں ترک وزیر خارجہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے (تصوير: بندر الجلعود)

 

لندن: بدر قحطانی – جدہ: "الشرق الاوسط”

      خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے ترک وزیر خارجہ جاویش اوغلو کا خیر مقدم کیا جو کویت کے دورہ کے بعد کل مکہ مکرمہ پہنچے۔ سعودی خبر رساں ادارے کے مطابق دونوں نے دو طرفہ تعلقات کا جائزہ لیا اور خطے کی تازہ ترین صورت حال پر تبادلہ خیال کیا۔

      لندن سے، سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبیر نے مصر، متحدہ عرب امارات، بحرین اور اپنے ملک کی طرف سے قطر کے خلاف "شکایات کی فہرست” تیار کرنے کے منصوبے کا انکشاف کیا ہے، جس کا عنقریب اعلان کیا جائے گا۔  انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ "دوحہ کو چاہیئے کہ وہ انتہا پسند یا دہشت گرد تنظیموں کی حمایت کی پالیسی اپنانے سے باز رہے اور برادر ممالک کے معاملات میں مداخلت اور انہیں اکسانے سے باز رہے”۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ مسٔلہ مشکل نہیں نہایت ہی آسان ہے۔ کل لندن میں سعودی عرب کے سفارت خانے میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران الجبیر نے یقین دہانی کی کہ یہ صرف سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر کا مطالبہ نہیں بلکہ پوری دنیا کا مطالبہ ہے کہ دہشت گردی اور اس کی مالی امداد کو بند کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اٹھائے جانے والے اقدامات براہ راست قطر کے لئے ایک پیغام ہے کہ دہشت گردی کی حمایت اور دوسرے ممالک کے معاملات میں مداخلت ناقابل قبول ہے”۔

ہفتہ 22 رمضان المبارک 1438 ہجری­ 17 جون 2017ء شمارہ: (14081)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>