ٹرمپ کی جانب سے ایران کے بغیر پوٹن کی "شام روس" اجلاس کی دعوت قبول - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 7 جولائی, 2017
0

ٹرمپ کی جانب سے ایران کے بغیر پوٹن کی "شام روس” اجلاس کی دعوت قبول

ماسکو کے "استحکام کو خراب” کرنے والے رویے پر واشنگٹن کی تنقید

                                  امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن

 

ہمبرگ – ماسکو: "الشرق الاوسط"

      امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ہمبرگ میں گروپ بیس کے سربراہی اجلاس کے ضمن میں اپنے روسی ہم منصب ولادیمیر پوٹن کے ساتھ دوطرفہ اجلاس کے موقع پر اعلان کیا ہے کہ "شام کو ایک ایسے سیاسی حل کی ضرورت ہے جو ایران کو اپنے ایجنڈے کے حصول اور دہشت گردوں کو دوبارہ واپسی کی اجازت نہ دے”۔

      ٹرمپ نے بدھ کی شام شروع ہونے والے اپنے چار روزہ یورپی دورے کے پہلے اسٹیشن وارسو میں اعلان کیا ہے کہ "امریکہ روس کے عدم استحکام کو حل کرنے کے لئے اپنے اتحادیوں کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے”۔ انہوں نے مزید کہا کہ "ہم روس سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ یوکرائن سمیت خطے کے دیگر ممالک میں عدم استحکام کی کاروائی بند کرے، اس کے علاوہ شام اور ایران میں اپنی دشمنانہ نظام حمایت کو بند کر کے ذمہ دار قوموں کے گروپ میں شامل ہو اور اپنی تہذیب کی حفاظت کی خاطر مشترکہ دشمنوں کو ختم کرے”۔

      جبکہ امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن نے ٹرمپ – پوٹن سربراہی اجلاس سے قبل اپنے جاری بیان میں واشنگٹن کے موقف کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ریاست ہائے متحدہ امریکہ "شام میں نوفلائی زون کے قیام، فائر بندی کے لئے نگرانوں کو پھیلانے اور انسانی بنیادوں پر امداد فراہم کرنے کی خاطر” ماسکو کے ساتھ تعاون کرنے کو تیار ہے۔

جمعہ – 13 شوال 1438 ہجری – 07 جولائی 2017ء  شمارہ: (14101)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>