لیبیا میں افواج کا نقشہ - اور بنغازی کے بعد حفتر کس سمت میں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 7 جولائی, 2017
0

لیبیا میں افواج کا نقشہ – اور بنغازی کے بعد حفتر کس سمت میں

 

لندن: كميل الطويل

      لیبیا میں تین سالہ جنگ کے بعد، "لیبیا نیشنل آرمی” کے کمانڈر مارشل خلیفہ حفتر کی افواج بنغازی کاروائی میں کامیاب ہوگئیں ہیں۔ یاد رہے کہ بنغازی وہ شہر ہے جہاں سے کرنل معمر قذافی کی حکومت کے خلاف سنہ 2011 میں انقلاب کی چنگاری اٹھی تھی۔ حفتر کی افواج دو روز قبل عسکریت پسندوں کے زیر کنٹرول آخری مضافاتی علاقے الصابری پر کنٹرول حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئی ہیں۔

      بھاری انسانی اور مادی نقصان کے باوجود بنغازی میں حفتر کی فتح ان کی اگلی منزل کے بارے میں بہت سے سوالات اٹھاتی ہے۔ چنانچہ بقیہ مخالفین اور قومی فوج کے مابین تصادم کے امکانات ہیں، اب چاہے یہ مشرقی لیبیا میں "القاعدہ” اور دیگر عسکریت پسندوں کے حامیوں کے گڑھ درنہ میں ہوں یا اس کے مغرب میں سرت، بنی ولید اور طرابلس کے علاقے میں؛ جہاں فائز سراج کی قیادت میں وفاقی حکومت نواز افواج پھیلی ہوئیں ہیں۔

جمعہ – 13 شوال 1438 ہجری – 07 جولائی 2017ء  شمارہ: (14101)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>