ڈی مستورا "الشرق الاوسط" سے: جنگ بندی کا نگران میکانیزم - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 12 جولائی, 2017
0

ڈی مستورا "الشرق الاوسط” سے: جنگ بندی کا نگران میکانیزم

درعا کا ایک رہائشی بزرگ کل گورنریٹ میں ایک تباہ شدہ عمارت کو دیکھتے ہوئے (رویٹرز)

 

لندن: ابراہیم حمیدی

      شام کے لئے بین الاقوامی ایلچی سٹیفن ڈی مستورا نے کل "الشرق الاوسط” سے ٹیلی فون پر بات کرتے ہوئے جنوب مغربی شام میں جنگ بندی پر "مؤثر کنٹرول” کی اہمیت پر زور دیا اور اشارہ کیا کہ "تفصیلات میں شیطان ہے”۔

      ڈی مستورا نے مطابق اتوار کے روز سے شروع ہونے والی جنگ بندی پر امریکہ اور روس کا اتفاق "صحیح سمت میں ایک قدم” ہے۔ انہوں نے کہا کہ "خطے میں شدت کو کم کرنے کے لئے یہ ایک (مرحلہ وار) عارضی اقدام ہے، اور میں شامیوں سے واضح طور پر کہنا چاہوں گا کہ: میں آپ کی تشویش کو سمجھتا ہوں کہ کم شدت والے علاقوں کے قیام سے درحقیقت (ملک کی) تقیسم ہوگی۔ لیکن میں چاہتا ہوں کی شامی عوام جان لے کہ اقوام متحدہ اور بین الاقوامی برادری کی ہمیشہ یہ کوشش ہوتی ہے کہ اس قسم کے علاقے عارضی ہوں اور یہ تقسیم شام کے مستقبل کا حصہ ہرگز نہ بنے”۔

بدھ – 18 شوال 1438 ہجری – 12 جولائی 2017ء  شمارہ: (14107)
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>