بچوں کے لئے طب، اقتصاد، سیاست اور دیگر علوم وفنون کی یونیورسٹی - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 11 اگست, 2017
0

بچوں کے لئے طب، اقتصاد، سیاست اور دیگر علوم وفنون کی یونیورسٹی

تعلیمی مدت دس سے چودہ دن

ویانا: بثینہ عبد الرحمن

        سات سالہ انڈریاس، گیارہ سالہ صوفی اور نو سالہ ملینا میں سے ہر ایک نے  اس سال بچوں کی ویانا یونیورسٹی سے ڈگری حاصل کیا ہے اور بچوں کی اس کامیابی پر سنہ 2017ء کی تعلیمی پروگرام میں شرکت کرنے والے ماں باپ ایک طرف خوش ہیں تو دوسری طرف یونیورسٹی کی اساتذہ ٹیم کو مباربادی مل رہی ہے اور قابل ذکر بات یہ ہے کہ اس پروگرام کا افتتاح ملک کے صدر الیگزینڈر وین ڈیر بلین نے کیا ہےاور وہ اس سے قبل اس یونیورسٹی میں استاذ کی خدمت انجام دے چکے ہیں۔

        بچوں کی ویانا یونیورسٹی کا خیال سنہ 2003ء میں آیا تھا تاکہ اس کے کامیاب ہو جانے کے بعد دوسرے بڑے شہروں کی قدیم یونیورسیٹیوں کا الحاق اس یونیورسٹی سے کیا جا سکے اور اس کام کے لئے گرمی کی چھٹی کے دوران ویانا یونیورسٹی کی خالی عمارتوں کو سات سال سے لیکر چودہ سال کے بچوں کو اپنی طرف مائل کرنے کے لئے استعمال کیا گیا ہے تاکہ ان کو یونیورسٹی کی تعلیمی دنیا سے آگاہ کیا جاسکے اور مستقبل میں ان کو اس تعلیمی دنیا کا شوقین بنایا جا سکے۔

پیر – 15 ذی القعدة 1438ہجری – 07 اگست 2017ء شمارہ نمبر:(14132)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>