ترکی کے ساتھ مل کر کسی قسم کی کوئی فوجی کاروائی نہیں :ایرانی "پاسداران" - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 23 اگست, 2017
0

ترکی کے ساتھ مل کر کسی قسم کی کوئی فوجی کاروائی نہیں :ایرانی "پاسداران”

لندن: "الشرق الاوسط”

      کل ایرانی "پاسداران انقلاب” نے، پیر کے روز ترک صدر رجب طیب اردگان کی طرف سے جاری بیان کی نفی کرتے ہوئے ایرانی سرحد سے باہر کسی بھی قسم کی کاروائی کرنے سے انکار کیا ہے۔ اس بیان میں ترک صدر نے کہا تھا کہ ایران کے ساتھ مشترکہ فوجی کاروائی کے معاہدے کے تحت "کرد لیبر پارٹی” اور اس کی ایرانی حلیف جماعت "کردستانی آزاد زندگی پارٹی” کے خلاف کاروائی کا آغاز کیا جائے گا۔

      ایرانی نیوز ایجنسی "مہر” نے ایرانی "پاسداران انقلاب” کے بیان کو نقل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے ایرانی سرحد سے باہر "کرد لیبر پارٹی” کی افواج کے خلاف کاروائی کے لئے ایران اور ترکی کے مابین کسی قسم کے معاہدہ سے انکار کیا ہے۔

 

بدھ – 1 ذی الحجہ 1438 ہجری – 23 اگست 2017ء شمارہ: [14148]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>