امریکہ اور روس کے درمیان شامی جزیرہ اور دیر الروز کی تقسیم - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 10 ستمبر, 2017
0

امریکہ اور روس کے درمیان شامی جزیرہ اور دیر الروز کی تقسیم

کل دیر الروز شہر میں ایک روسی بکتر بند گاڑی (اے ایف پی)

لندن: ابراہیم حمیدی

        ایک بڑے مغربی ذمہ دار نے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ امریکہ اور روس کے درمیان سمجھوتے ہوئے ہیں جن کی بنیاد پر شام کی ڈیموکریٹ عرب فورسز نے نہر فرات کے مشرقی علاقے سے تنظیم داعش کو بھگانے کے لئے امریکہ کی مدد سے "عاصفۃ الجزیرہ” نامی جنگ کا آغاز کیا ہے جبکہ شامی فورسز نے ماسکو کی مدد سے دیر الروز کے شہر کو داعش سے آزاد کرانے کے لئے اقدام کیا ہے۔

        ذمہ دار نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ واشنگٹن مغربی فرات کے دیر الروز علاقہ میں شامی فورسز کے تیز اقدام کی وجہ سے حیران ہو گیا اور اسی وجہ سے مشرقی کنارہ کو آزاد کرانے کی جنگ کے آغاز میں جلدی کی گئی، شام کی ڈیموکریٹک فورسز کے تقریبا دس ہزار افرار کے لئے فوجی تعاون اور ان کے لئے انٹیلیجنس کا ادارہ فراہم کیا گیا اور داعش کے اڈہ الرقہ کو آزاد کرانے کا انتظار نہیں کیا گیا۔

اتوار – 19 ذی الحجہ 1438 ہجری مطابق 10 ستمبر 2017 ء شمارہ نمبر: (14166)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>