قاہرہ کے معاہدہ کی وجہ سے فلسطینی تقسیم کا ایک نیا رخ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 13 اکتوبر, 2017
0

قاہرہ کے معاہدہ کی وجہ سے فلسطینی تقسیم کا ایک نیا رخ

حکومت چھ ہفتوں کے دوران غزہ پٹی اور رفح معبر کو اپنے قبضہ میں لے گی اور عنقریب عباس کی حکومت غزہ پٹی میں نظر آئے گی

تحریک فتح کے وفد کے صدر عزام الاحمد کو دائیں اور تحریک حماس کے وفد کے صدر صالح العاروری کو کل قاہرہ میں ایک معاہدہ کے دوران دستخط کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

رام اللہ: کفاح زبون

        تحریک فتح اور حماس نے کل قاہرہ میں فلسطینی تقسیم کے ایک معاہدہ پر دستخط کرکے دونوں فریقین کے دوران ایک اہم مصالحت کا معاہدہ کیا ہے۔ تحریک فتح کے صدر عزام الاحمد نے کہا کہ جس معاہدہ پر انہوں نے تحریک حماس کے سیاسی دفتر کے نائب صدر صالح العاروری کے ساتھ دستخط کیا ہے اس کی وجہ سے قانونی حکومت غزہ پٹی کے اندر صحیح انداز میں پوری صلاحیت کے ساتھ اور مغربی کنارہ میں بنیادی قانون کے مطابق کام کرنا شروع کر دے گی۔

        معاہدہ کے اس پہلے اقدام کی وجہ سے جس میں متعین زمنی شیڈول کے بارے میں گفتگو کی گئی ہے اس سے وفاقی قومی حکومت کو غزہ پٹی کو کم سے کم ایک دستمبر تک اپنے قبضہ میں کر لینے کی اجازت مل جائے گی۔ اس معاہدہ میں اس بات کی تعیین کی گئی ہے کہ غزہ کی ساری گزرگاہیں آئندہ ماہ کے اندر حکومت کے حوالہ کر دی جائیں گی اور رفح نامی گزرگاہ اور مصر کی سرحدوں کو صدارتی گارڈ کے حوالہ کر دیا جائے گا اور اس کی ترتیب قاہرہ کے ساتھ مل کر ہوگی۔۔۔۔ اور اس تقسیم کے خاتمہ کے اعلان کے وقت صدر عباس غزہ کا دورہ بھی کریں گے۔(۔۔۔)

جمعہ – 23 محرم 1439 ہجری – 13 اكتوبر 2017ء شمارہ نمبر: (14199)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>