امریکہ کا حوثیوں کی طرف سے بیلسٹک میزائل کے بعد ایران کے خلاف کاروائی کا مطالبہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
کو: بدھ, 8 نومبر, 2017
0

امریکہ کا حوثیوں کی طرف سے بیلسٹک میزائل کے بعد ایران کے خلاف کاروائی کا مطالبہ

ریاض جواب دینے کے حق کا اعادہ کر رہا ہے اور تہران کے میزائل کو "براہ راست دشمنی” قرار دے رہا ہے

یمنی خواتین کل صنعا میں گیس کے سلنڈر بھروانے کے لئے انتظار کر رہی ہیں (رویٹرز)

نیویارک: جوردن دقامسہ – ریاض: عبد الہادی حبتور

     کل ریاست ہائے متحدہ امریکہ نے ایران کے خلاف اقوام متحدہ کی کاروائی کا مطالبہ کیا ہے، جو کہ اس کی طرف سے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے یمن میں حوثی باغیوں کو میزائل فراہم کرنے کی وجہ سے ہے۔ اقوام متحدہ میں امریکی خاتون سفیر نیکی ہائلی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ "تہران حکومت اپنی بین الاقوامی ذمہ داریوں کی توہین کی بار بار تصدیق کر رہی ہے”، انہوں نے مزید کہا کہ "ان کا ملک اقوام متحدہ اور اس کے بین الاقوامی شراکت داروں سے ایرانی حکومت کی طرف سے ان خلاف ورزیوں کے مسٔلہ میں مؤثر جواب دینے کی حوصلہ افزائی کرتا ہے”۔ (۔۔۔)

     کل سعودی عرب کی وزارء کمیٹی نے یمن کی سرزمین سے سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض کی جانب بیلسٹک میزائل چھوڑنے کی مذمت کا اعادہ کیا۔ اسی طرح سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبد العزیز نے ٹیلی فونک رابطے کے دوران برطانوی وزیر خارجہ بورس جانسن کو یقین دہانی کی کہ ایرانی حکومت کی جانب سے  حوثی ملیشیا کو میزائل کی فراہمی "براہ راست فوجی جارحیت اور سعودی عرب کے خلاف ایک عملی کاروائی شمار کی جائے گی”۔

 

بدھ – 19 صفر 1439 ہجری – 08 نومبر 2017ء  شمارہ: (14225)
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>