یمن میں پروازیں کھلنے کے بعد عدن میں تجارتی پرواز کی لینڈنگ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 15 نومبر, 2017
0

یمن میں پروازیں کھلنے کے بعد عدن میں تجارتی پرواز کی لینڈنگ

حوثی اپنی فوج میں شامل بچوں کی لاشوں کی تصاویر کی اشاعت سے روک رہے ہیں

کل عدن کے شہر میں یمنی شہری خود کش دھماکے کے مقام کے سامنے کھڑے ہیں جس میں 6 سیکورٹی اہلکار ہلاک ہوگئے تھے (ا.ب.ا)

 

جدہ: سعيد الابيض – عدن: "الشرق الاوسط”

      "رویٹرز” ایجنسی نے یمنی ایئر لائنز کے حکام  کے ایک ذریعہ سے نقل کرتے ہوئے کہا ہے کہ کل یمن کے عدن انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر مصر کے دارالحکومت قاہرہ لوٹنے سے قبل ایک تجارتی پرواز اتری جو کہ قاہرہ سے آئی تھی۔ یہ سب اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے مستقل نمائندے عبد اللہ المعلمی کی جانب سے اس اعلان کے بعد ہے جس میں یمن کی قانونی حکومت کے حمایتی اتحاد کی طرف سے یمن کے ایئر پورٹس اور بندگاہوں کو بتدریج دوبارہ کھولنے کے عزم کا اظہار کیا گیا تھا۔ یاد رہے کہ گذشتہ دنوں یمن کے حوثیوں کی جانب سے ریاض پر میزائل داغنے کے بعد یمن کی تمام بندرگاہیں اور ایئر پورٹس بند کر دیئے گئے تھے۔

      دریں اثناء حوثیوں کے رہنما عبد الملک حوثی نے اپنے پیروکاروں کو خطاب کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ وہ اپنی افواج میں شامل بچوں کی ہلاکتوں کے بعد ان کی تصاویر نہ لیں، یہ اقدام بچوں کے حق میں ملیشیا کی طرف سے کی جانے والی خلاف ورزیوں کے نشانات مٹانے کی کوشش کے ضمن میں ہے۔ (۔۔۔)

 

بدھ – 26 صفر 1439 ہجری – 15 نومبر 2017ء  شمارہ: [14232]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>