ایران کی طرف سے زلزلہ کے بعد ریسکیو آپریشنز موقوف اور بچنے والے پریشان - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 15 نومبر, 2017
0

ایران کی طرف سے زلزلہ کے بعد ریسکیو آپریشنز موقوف اور بچنے والے پریشان

کل سربل ذہاب کے شہر میں زلزلے سے تباہ ہونے والے گھر کے ملبے پر بیٹھی ہوئی ایک ایرانی خاتون کو دیکھا جا سکتا ہے(اے پی)

لندن: "الشرق الاوسط”

        کل میڈیا کے سرکاری ذرائع نے کہا کہ ایرانی ذمہ داروں نے ریسکیو آپریشن کو یہ کہتے ہوئے ختم کیا ہے کہ مزید بچنے والوں کو حاصل کرنے کا وقت نہیں ہے اور کل ایرانی صدر حسن روحانی نے سخت زلزلہ کے سے دوچار گورنریٹ کی دار الحکومت کرمانشاہ پہنچنے کے وقت اسے دوبارہ تعمیر کرنے کا وعدہ کیا ہے اور یہ بھی کہا کہ حکومت بہت جلد ممکنہ وقت میں اپنی پوری طاقت خرچ کر دیگی اور یہ حکومت اس حادثہ کے شکار لوگوں کے ساتھ ہے۔

        ایران کی سرکاری نتائج نے بتایا ہے کہ اتوار کے دن عراق کی سرحد پر واقع کرمانشاہ گورنریٹ میں زبرزست زلزلہ آیا اور ایران کے مغربی علاقہ سے لے کر تہران تک کے شہریوں نے اس زلزلہ کو محسوس کیا اور اس زلزلہ میں 530 افراد ہلاک اور 7370 افراد زخمی ہوئے ہیں۔(۔۔۔)

        ایرانی ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ نقصان شدہ علاقوں میں اب صورتحال قابو میں ہے لیکن ایرانی میڈیا نے لوگوں کی گفتگو کو ریکارڈ کیا ہے جس میں لوگ کھلے میدان میں ٹھنڈک، طبی سہولتیں اور کھانے پینے کی چیزیں نہ ملنے کی شکایت کرتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

بدھ – 26 صفر 1439 ہجری – 15 نومبر 2017ء  شمارہ نمبر: (14232)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>