سہ فریقی معاہدے میں ایران سے بالا تر "پر امن علاقے" کی ضمانت - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 17 نومبر, 2017
0

سہ فریقی معاہدے میں ایران سے بالا تر "پر امن علاقے” کی ضمانت

"الشرق الاوسط” جنوبی شام سے متعلق امریکی روسی اردنی معاہدے کی شقوں کی اشاعت کر رہا ہے

 

لندن: ابراہیم حمیدی

      امریکی، روسی، اردنی معاہدے کی دستاویز نے انکشاف کیا ہے کہ ماسکو "غیر شامی جنگجوؤں؛ اس سے مراد "حزب اللہ” اور ایرانی ملیشیا ہیں، انہیں شام کے جنوب میں شام کی حکومتی افواج اور مخالف جماعتوں کے مابین پانچ کلومیٹر پر پھیلے "پرامن علاقے” سے دور رکھنے کے منصوبے پر "فوری عمل درآمد” کا عزم رکھتا ہے۔ یہ دستاویز؛ جس کے مواد کو "الشرق الاوسط” نے دیکھا ہے، اس میں روس کی طرف سے نگرانی کے لئے 10 اور تفتیش کے لئے 2 پوائنٹس قائم کرنا شامل ہے اور اس کے بدلے میں واشنگٹن اور عمان کے ساتھ عہد کیا گیا کہ شام کے جنوب مغرب میں فائر بندی کے علاقوں میں شامی مخالف جماعتوں کے ہمراہ "داعش”، "نصرت فرنٹ” اور "القاعدہ” کے خلاف فوری لڑائی کی کاروائی پر عمل کیا جائے گا۔

      گذشتہ ہفتے عمان میں ہونے والے معاہدے میں ایک طرف "نصرت” اور "داعش” کے لئے لڑنے والی مخالف جماعتوں کے ساتھ جنگ جاری رکھنے اور دوسری جانب "غیر شامی افواج” کو "پرامن” علاقے سے نکالنے کا عزم کیا گیا۔ اس معاہدے میں "حزب اللہ” اور ایرانی ملیشیاؤں کا ذکر نہیں کیا گیا، لیکن اس سہ فریقی مذاکرات میں تہران کے ماتحت جماعتوں کے بارے میں واضح طور پر بات کی گئی۔ (۔۔۔)

 

جمعہ – 28 صفر 1439 ہجری – 17 نومبر 2017ء  شمارہ: [14234]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>