توانائی شعبوں میں سعودی اور عراقی کمپنیوں کے درمیان 18 افہام وتفہیم کے معاہدے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 6 دسمبر, 2017
0

توانائی شعبوں میں سعودی اور عراقی کمپنیوں کے درمیان 18 افہام وتفہیم کے معاہدے

الفالح نے پر زور انداز میں کہا کہ دونوں ممالک ایسے اسٹریٹجک فوائد سے لطف اندوز ہوں گے جن کی وجہ سے ان کے درمیان مضبوط تعاون کا سلسلہ شروع ہوگا

کل بصرہ میں دونوں ممالک کے درمیان افہام وتفہیم کے معاہدے پر دستخط کرنے کے لیے سعودی توانائی کے وزیر کو اپنے عراقی ہم منصب کے ساتھ دیکھا جا سکتا ہے

بصرہ: "الشرق الاوسط”

         کل عراق کے شہر بصرہ میں عراقی اور سعودی کمپنیوں نے سعودی عرب کے معدنیاتی وسائل، صنعت اور توانائی کے وزیر انجینئر خالد الفالح اور ان کے ہم منصب عراقی پٹرولیم کے وزیر انجینئر جبار اللعبی کے موجودگی میں توانائی کے میدانوں میں افہام وتفہیم کے 18 معاہدوں پر دستخط کیا ہے۔(۔۔۔)

           الفالح نے کہا که دونوں ممالک اپنی عوام کے لیے روشن مستقبل کی تعمیر کرنے کے سلسلہ میں پر عزم ہیں۔(۔۔۔)

        انہوں نے پرزور انداز میں کہا کہ سعودی عرب اور عراق اسٹریٹجک فوائد سے لطف اندوز ہیں۔(۔۔۔) الفالح نے پرزو لہجہ میں کہا کہ ان سارے تعلقات اور خصوصیات کی وجہ سے عراق کے ساتھ تعاون اور یکجہتی ایک اسٹریٹجک رخ اختیار کرے گا۔(۔۔۔)

بدھ – 18 ربيع الأول 1439 ہجری – 06 دسمبر 2017ء  شمارہ نمبر: (14253)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>