ماسکو کا "سوچی کانفرنس" کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے سے خبردار - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 28 دسمبر, 2017
0

ماسکو کا "سوچی کانفرنس” کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے سے خبردار

دمشق کے قریب حزب اختلاف کے انخلا کا آغاز، اور ادلب میں "موصل ثانی” بننے کا خوف

رقہ لڑائی کے دوران تباہ ہونے والے ایک رومن کیتھولک چرچ کے اندر کرسمس کا علامتی جشن (ا۔ ف۔ ب)

 

ماسکو: طہ عبد الواحد – بیروت: بولا اسطیح

      کل روسی وزیر خارجہ سیرگی لافروف نے آئندہ ماہ کے آواخر میں سوچی کانفرنس کے انعقاد میں رکاوٹ ڈالنے سے خبردار کیا ہے۔ انہوں نے ماسکو میں شامی گروپ "الغد السوری” کے سربراہ احمد الجریا کے ساتھ ہونے والی بات چیت کے دوران کہا کہ جنوری 2018 کے آخر میں شامی ڈائیلاگ کانفرنس کے انعقاد کا مقصد شامیوں کی شرائط سے اتفاق کرتے ہوئے وسیع تر آئینی اصلاحات کے آغاز کی خاطر راہ ہموار کرنا ہے۔ (۔۔۔)

      دوسری جانب، مخالف مسلح جماعتوں کا حکومت کے ساتھ ہونے والے معاہدے کی شرائط پر عمل درآمد کرتے ہوئے، مخالف جماعتیں مغربی غوطہ کے علاقے سے انخلا کر کے گورنریٹ ادلب اور درعا واپس جانے کے لئے مکمل تیار ہیں۔ جبکہ خبروں کے مطابق "نصرت فرنٹ” کے عناصر اہل علاقہ اور "آزاد فوج” کے خوف سے ادلب کی جانب جانے کے لئے نئی تیاری کر رہے ہیں جو اسے "موصل ثانی” بنانے کی کوشش کر رہی ہے، جو کہ ان کی ممکنہ تباہی کی جانب ایک اشارہ ہے جسے عراقی شہر (موصل) میں "داعش” کا گھیراؤ کر کے تباہ کیا تھا۔ میدانی ذریعہ کے مطابق مخالف جاعتوں کے تقریبا 300 عناصر نے جنوب مغربی دمشق کے علاقے تل مروان اور مغر المیر کے دیہات میں اپنے ٹھکانے چھوڑ کر ادلب کی جانب نقل مکانی کی ابتدا میں بیت جن کی جانب پلے گئے ہیں۔

 

جمعرات – 10 ربيع الثاني 1439 ہجری – 28 دسمبر 2017ء  شمارہ: [14275]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>